کشمیری نوجوانوں کا مجاہدین میں شمولیت کا سلسلہ جاری
No image سرینگر( کشیر رپورٹ) ہندوستانی مقبوضہ کشمیر میں اس سال 40نوجوانوں نے ہندوستان سے آزادی کے لئے مسلح مزاحمت کا راستہ اپنا یا ہے جبکہ اسی عرصے کے دوران 50 نوجوان اپنے گھروں سے غائب بتائے جاتے ہیں جن کے متعلق ہندوستانی انٹیلی جنس ایجنسیوں کا خیال ہے کہ وہ بھی کشمیری مجاہدین کے ساتھ شامل ہوئے ہیں۔ مقبوضہ کشمیر کے میڈیا میں ہندوستانی انٹیلی جنس ذرائع کے حوالے سے یہ بات بتائی گئی ہے۔ایجنسیوں کے مطابق بھرپور دبائو کے باوجود کشمیری نوجوانوں کا اتنی بڑی تعداد میں مسلح مزاحمت کا راستہ اپنانا ہندوستان کے لئے بڑی پریشانی کا باعث ہے۔گزشتہ سال اسی عرصے میں بھی تقریبا اتنی ہی تعداد میں کشمیری نوجوان مجاہدین کے ساتھ جا ملے تھے۔
انٹیلی جنس ذرائع کے مطابق 25 فروری سے کنٹرول لائین کی خلاف ورزی کا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا ۔بھارتی حکام کا دعوی ہے کہ پاکستان نے لائین آف کنٹرول پر سیز فائرFATFکے تناظر میں کیا ہے۔انٹیلی جنس ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ گزشتہ سال کل131 کشمیری نوجوان مجاہدین میں شامل ہوئے جبکہ2019. میں یہ تعداد 117 رہی۔
واپس کریں