تعمیر و ترقی، گڈگورنس، ریاستی حقوق سمیت متعدد شعبوں میں کارہائے نمایاں سرانجام دئیے،وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر
No image مظفرآباد(14جون2021)پاکستان میں مستقبل مسلم لیگ ن کا ہے 2018 میں جہاں ترقی کا سفر رک گیا تھا آج تک وہاں سے آگے جانا تو دور کی بات وہاں تک نہیں پہنچا آج ہر صوبے علاقے کے لوگ ن لیگ کی راہ تک رہے ہیں اور اس وقت تمام رائے عامہ کے جائزوں کے مطابق ن لیگ کا گراف سب سے بلند ہے آزادکشمیر میں بھی مسلم لیگ ن دوبارہ جیت کر حکومت بناے گی دونوں حلقوں سے الیکشن لڑنے کا فیصلہ کارکنوں کے اصرار پر کیا آزادکشمیر بھر میں بھرپور انتخابی مہم چلائیں گے مخالفین کے پاس کوئی ایجنڈا نہیں نا نوکریوں نا ہی کسی اور مفادات کے تحت لوگوں کو بیوقوف بنایا جاسکتا ہے۔وزیراعظم آزادحکومت ریاست جموں و کشمیر راجہ محمد فاروو حیدر خان نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن نے تعمیر و ترقی، گڈگورنس، ریاستی حقوق سمیت متعدد شعبوں میں کارہائے نمایاں سرانجام دئیے۔ عوامی خدمت کے بل بوتے پر آمدہ انتخاب جیتیں گے۔ پی ٹی آئی کا حال پاکستان کے اگلے الیکشن میں ق لیگ سے بھی برا ہوگا سیاست تو درکنار عوام کے پاس کیا کارکردگی لیکر جائیں گے کشمیری عوام کشمیر فروشوں کو مسترد کر دیں گی۔ آزادکشمیر پی ٹی آئی کا سیاسی قبرستان ثابت ہوگا۔ آزادکشمیر کے عوام پانچ سال پہلے کے اور موجودہ آزادخطہ کا موازنہ کر کے فیصلہ کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے مختلف وفود سے ملاقات کے دوران اظہار خیال کرتے ہوئے کیا۔
انہوں نے کہا کہ وفاقی محصولات26 سال بعد آزادکشمیر کے حصے کو 2.4 سے بڑھا کر 3.7 کروایا گیا۔ ریاستی تاریخ میں پہلی بار تمام اضلاع اور تمام حلقوں کو وافر فنڈز کی فراہمی کو یقینی بنایاگیا۔ عوامی فلاح و بہبود و دیہی ترقی اور دور دراز کے علاقوں کے لوگوں کو بنیادی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا گیا۔ گزشتہ تقریباًپانچ سالوں میں میں 10ارب سے زائد مالیت کے چھوٹے بڑے و دیہی ترقی کے منصوبوں کی تکمیل ہوئی۔ ترقیاتی منصوبہ جات جات میں 100فیصد مالی و انتظامی شفافیت اور براہ راست مقامی کمیونٹیز کے اشتراک سے مثالی عملدرآمدکو یقینی بنایا گیا۔ عوام سے کیے گئے تعمیروترقی کے وعدے پورے کرتے ہوئے آزادکشمیر کے10اضلاع کے دیہاتوں کو ماڈل ویلج میں بدلنے کی بنیاد رکھی گئی۔ ممبران اسمبلی کو حلقہ کے لئے 50 لاکھ روپے ترقیاتی بجٹ سے بڑھا کر وزیراعظم کمیونٹی انفراسٹکچر ڈویلپمنٹ پروگرام کے تحت ہر حلقہ کے لئے 4 کروڑ سے زائد کے ترقیاتی فنڈزکی فراہمی دئیے گئے تاکہ کوئی حلقہ احساس محرومی کی شکایت نہ کرے۔ہائیڈرل کے منصوبہ جات کے واٹر یوز چارجز کو 15پیسے سے بڑھاکر1 روپے10پیسہ کیا گیا ہے جس پر عملدرآمد کے بعد اس مد میں ریاست کو خاطر خواہ فنڈز حاصل ہوں گے۔۔آزادکشمیر میں سیاحت کے فروغ کیلئے ٹورازم ماسٹر پلان کے ذریعے قانون سازی کے بعد ٹورازم کوریڈور کی فزیبلٹی تیار کروائی گئی۔ سال2019کو سیاحت کے سال کے طور پرمنایا گیا۔ ٹورازم پالیسی اورٹورازم پروموشن ایکٹ کی منظور کر کے سرمایہ کاروں کی حوصلہ افزائی کی گئی اور پہلی بار بین الاقوامی ثقافتی کانفرنس کا انعقاد، بکروال کلچر کے فروغ کیلئے ویبینار کا انعقاد۔ مظفرآباد لال قلعہ اور آزادکشمیر کے پہلا دارلخلافہ جنجال ہل کی بحالی،ٹورازم ریگولیٹری بورڈ کی تشکیل، ونٹر اور ایڈونچر ٹورازم کا فروغ۔ سیاحوں کی حفاظت اور رہنمائی کیلئے ٹورازم پولیس کا قیام،ٹورازم سمارٹ کارڈاور ٹورازم ایپ کا اجرا کیا گیا۔تمام بین الاضلاعی شاہرات کی اپ گریڈیشن اور ری کنڈیشنگ کی گئی۔ میرپور میں انڈسٹریل زون کا قیام عمل میں لایاگیا۔ پانچ سال میں تقریباً1ہزار کلو میٹر شاہرات کو تعمیر /اپ گریڈ کیا گیا۔ اس کے علاوہ لنک روڈز،پلوں کی تعمیر اور پہلے سے موجودہ لنک روڈز کی ری کنڈیشنگ شامل ہے۔تمام اضلاع میں ہسپتالوں کی اپ گریڈیشن کی گئی۔ آزاد کشمیر میں بجلی کے نظام کو بہتر کرنے کیلئے نئی لائنوں کی تنصیب اور ایل ٹی لائنز کی تکمیل کرکے بجلی نظام میں بہتری کیلئے عملی اقدامات کئے ہیں۔ لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزیشن کا عمل شروع کیا گیا۔ عوام کی سہولت کیلئے ای فسیلیٹیشن سینٹر کا قیام، کمپیوٹرائزڈ ڈرائیونگ لائسنس کا اجرائ ، ویڈیو کانفرسنگ سسٹم، اعلیٰ عدلیہ میں جدید آئی ٹی سسٹم کی تنصیب۔ ایمپلائرز مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم کا قیام، ڈیزاسٹر اسسمنٹ اینڈ ریلیف مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم کا قیام عمل میں لایا گیا۔ آزاد کشمیر بھر میں 30ہزار سے زائد افراد کو بلا سود قرضوں کی فراہمی کی گئی۔ محکمہ صحت میں 1000ٹیکنیکل آسامیوں کی تخلیق کی گئی۔میرپور میں نرسنگ کالج کا قیام عمل میں لایا گیا۔ میرپور میں کیتھ لیب کا قیام جہاں مریضوں کی انجیو گرافی اور انجیو پلاسٹی کی سہولیات میسر آئیں گی۔ لائیو سٹاک کی صنعت کو فروغ دینے کیلئے300ڈیری فارمز کا قیام عمل میں لایا گیا۔ سرکاری دفاتر کی مکانیت کو پورا کرنے کیلئے تمام اضلاع میں نئی عمارات کی تعمیرکی گئیں۔ ان چند منصوبوں کے علاوہ آزادکشمیر میں ہزاروں دیگر منصوبہ جات عوامی خدمت اور ریاستی خوشحالی کا منہ بولتا ثبوت ہیں۔

واپس کریں