عمران خان آزادکشمیر میں جھرلو ٹھپے سے ربڑ سٹیمپ اسمبلی قائم کرانا چاہتا ہے، وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر خان
No image مظفرآباد(24جون2021) وزیراعظم آزادجموں وکشمیر و صدرمسلم لیگ ن راجہ محمد فاروق حیدرخان نے کہا ہے کہ مودی دہلی میں کٹھ پتلی قیادت کو ساتھ ملا کر کشمیر کا فیصلہ نہیں کر سکتا، کشمیری شہداءکے وارث زندہ ہیں ، کسی کو کشمیر پر سودے باز ی نہیں کرنے دیں گے ۔ اس پار ہو یا اُس پار کشمیری عوام سے پوچھے بغیر کوئی فیصلہ نہیں کرنے دیں گے ۔ادھر مودی کٹھ پتلی قیادت کے ساتھ کانفرنس کررہا ہے اور یہاں وزیراعظم پاکستان اپنے دفتر میں روزانہ اجلاس بلا کر آزادکشمیر میں الیکشن جیتنے کےلئے منکرین قرآن اوراپنے زیر اثر سارے اداروںکو ساتھ جوڑ کر اپنی پارٹی بنا رہے ہیں۔ مودی اور عمران خان کا مشترکہ منصوبہ ہے کہ کشمیر کو ہڑپ کیا جائے مگر جب تک ایک بھی باغیرت کشمیری زندہ ہے یہ کسی صورت نہیں ہونے دینگے۔ آزادکشمیر کے آئین میں ترمیم کےلئے دوتہائی اکثریت کی ضرورت ہے ، عمران اس منصوبے پر کاربند ہیں کہ جھرلو ٹھپے کے ذریعے لاکریہاں کی اسمبلی سے سٹیمپ لگوائی جائے ۔ جب تک ہم زندہ ہیں ایسا کسی صورت نہیں ہوگا۔ عتیق خان کو صرف اتنا کہوں گا کہ دائیوں سے پیٹ نہیں چھپے ہوتے میں نے اگر بات کا جواب دےدیا تو پھر شاید جواب دینے کے قابل نہ رہیں۔ پی ٹی آئی میں پانچ وزرائے اعظم موجود ہیں اب تو ایک صاحب باہر سے امیدوار بن کر بیٹھ گئے ہیں ۔وہ کہتے ہیں کہ ہمارے پاس سیٹیں تو نہیں مگر ہماری اہمیت کے پیش نظر ہمیں نوازا جائے گا۔ پی ٹی آئی کے ٹکٹوں میں پیسوں کا بھاری لین دین ہوا،ان کے سابق جنرل سیکرٹری اورلاہورسے سابق امیدوار نے پول کھول دیاکہ کس طرح پیسے لیے ۔ آزادکشمیر کو لوفراور بدتمیز لوگوں کے ہاتھوں میں نہیں جانے دیں گے ۔ زرداری ہاﺅس میں کوئی گھسنے نہیں دیتا ، بنی گالہ میں تو وزراءکی بھی رسائی نہیں ، جس طرح خیبر پختونخواہ اور پنجاب کو وہاں سے کنٹرول کیا جارہا ہے آزادکشمیر کو بھی وہاں سے کنٹرول کرنے کے خواب دیکھ رہے ہیں مگر انہیں یہ بتادینا چاہتا ہوں کہ باغیرت کشمیری زندہ ہیں اور انشاءاللہ 25جولائی کو مسلم لیگ ن کو بھاری اکثریت سے کامیاب کریں گے ۔ بجٹ میں تنخواہوں میں35فیصد اضافہ کررہے ہیں ۔
ان خیالات کا اظہار انہوں نے یونین کونسل سلمیہ اور ٹاﺅن کمیٹی چکار کے لیگی عہدیداران کے ایک بڑے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ وزیراعظم آزادکشمیر جب اجلاس میں شرکت کےلئے پہنچے تولیگی کارکنان نے فلک شگاف نعروں کی گونج میں انہیں ویلکم کیا ۔ اجلاس میں کارکنان کی کثیر تعداد میں شرکت نے ہال کو بھر دیا، ہال میں کرسیاں کم ہونے کی وجہ سے بڑے تعداد میں لوگوں نے کھڑے ہو کر وزیراعظم کا خطاب سنا۔اجلاس کی صدارت صدرمسلم لیگ ن چکار راجہ آفتاب خان نے کی جبکہ اجلاس سے حلقہ چھ کے صدر سردار عبدالقیوم خان، مسلم لیگ ن کے ضلعی صدر فرید خان،احسان دانش و دیگر عہدیدران نے بھی خطاب کیا۔ صدرمسلم لیگ ن نے خطا ب کرتے ہوئے کہاکہ مہنگائی نے عام آدمی کا جینا بے حال کر دیا، غریب اور مزدور پیشہ شخص کی زندگی اجیرن بن گئی ہے ، اس کو ایک وقت کا کھانا بھی میسر نہیں آتا، آزادکشمیر میں بھی مہنگائی کا شدید اثر پڑا ہے ۔ یہ اپنی تبدیلی کی ساری خرافات جس میں مہنگائی ، بیروزگاری سب آزادکشمیر میں لانا چاہتے ہیں۔ اگرایسا ہوا تو خدانخواستہ لوگوں کو فاقے لگیں گے ۔ ہم کسی صورت آزادکشمیر میں پی ٹی آئی کی نحوست کا سایہ نہیں پڑنے دیں گے۔ انہوں نے کہاکہ عوام خود دیکھیں کہ آج آٹا، چینی دال اور دیگر اشیائے ضروریہ کی قیمتیں کیا ہیں اور نواز شریف کے دور میں کیاتھیں۔ تیل ڈیزل پیٹرول اتنامہنگا کر دیا ہے کہ عام آدمی کی کمر ٹوٹ گئی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ آزادکشمیر کی اپنی آمدن ہے اور اپنی آمدن میں اضافے سے ہم نے نہ صرف تنخواہوں میں اضافہ کررہے ہیں بلکہ لوگوں کو مزید بھی سہولیات دیں گے ۔انہوں نے کہاکہ جو لوگ پڑھے لکھے اعلی تعلیم یافتہ ہیں اور ان کے پاس کوئی روزگار نہیں ان کو وظیفہ دینے کےلئے حکومت خصوصی فنڈ قائم کریں گے تاکہ وہ اپنی تعلیم جاری رکھتے ہوئے آسانی سے زندگی بہتر کرسکیں۔

واپس کریں