تحریک انصاف میں شامل ہونے والے سیاسی خودکشی کر رہے ہیں،آزاد کشمیر میں پاکستان جیسے حالات پیدا ہونے نہیں دیں گے، وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر خان
No image مظفر آ باد۔ وزیر اعظم آزادکشمیر و صدر مسلم لیگ ن راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا ہے کہ وزیر اعظم ہاؤ س اسلام آباد میں بیٹھ کر آزادکشمیر الیکشن کو فتح کرنے والوں کو 25جولائی کو عوام مسترد کریں گے۔ مستقبل مسلم لیگ ن کا ہے۔ تحریک انصاف میں شامل ہونے والے سیاسی خودکشی کر رہے ہیں۔ آزادکشمیر میں مسلم لیگ ن واضح اکثریت سے جیت رہی ہے۔مہاجرین جموں وکشمیر کی نشستیں پنجاب کے ضمنی انتخابات کی طرح مسلم لیگ ن جیتے گی۔ 2018میں آٹا کتنے روپے کلو تھا اور آج کے ریٹ کا پتہ کریں لیں۔ عمران خان نے غریبوں کو زندہ درگور دیا ہے۔ مزدور پیشہ شخص کی زندگی مہنگائی نے اجیرن بنا دی۔ پاکستان کی تعمیر و نو اور آزادکشمیر کی تعمیر وترقی اللہ رب العزت نے مسلم لیگ ن کے حصہ میں لکھی ہے۔ پاکستان کے حالات دیکھ کر دل خون کے آنسو روتا ہے۔ آزادکشمیر میں اللہ کے فضل وکرم سے ایسے حالات پیدا نہیں ہونے دیں گے۔ نہ دھاندلی چلے گی نہ حکومت پاکستان کی مداخلت۔ 25جولائی کو انشاء اللہ بھاری اکثریت سے کامیاب ہونگے۔
ان خیالات کا اظہار گزشتہ روز انہوں نے اپنے حلقہ انتخاب کے علاقوں چنوئیاں، گجر بانڈی، میرا بکوٹ، پاہل، سڑک چناری، کٹھائی،روند، بنیاں میں کارنر میٹنگ اور عوام علاقہ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پرسینکڑوں افراد نے مسلم لیگ ن میں شمولیت اختیار کی جبکہ کے ناراض کارکنوں نے پوری قوت کے ساتھ جماعت کی انتخابی مہم چلانے کا عزم کیا۔ وزیر اعظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ مسلم لیگ ن کے نظریاتی کارکنوں کو سلام پیش کرتا ہوں کہ جو خود وسائل خرچ کر کے وہ میری انتخابی مہم کو چلا رہے ہیں۔ آج آزادکشمیر بھر میں مسلم لیگ ن باوجود تمام تر سازشوں، مفاداتی ٹولے کے بدلتے رنگوں کے باوجود الخمدو اللہ پہلے نمبر پر ہے اور پنجاب کا ٹرنڈ بتا رہا ہے مسلم لیگ ن وہاں پر مکین مہاجرین کے نشستوں سے پاکستان مسلم لیگ ن کلین سویپ کرے گی۔ وزیر اعظم آزادکشمیر نے کہا کہ اللہ رب العزت نے ہم سے بڑے بڑے کام لیے مگر سب سے زیادہ کام ختم نبوت کی آئینی ترمیم کا تھا جس کا اعزاز رب العزت نے ہمیں عطا فرمایا اور اس کا اجر میرے حلقہ کے عوام کو بھی جائے گا جنہوں نے مجھے ووٹ کی پرچی سے منتخب کیااور قانون ساز اسمبلی تک پہنچایا۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان نے کبھی نہ اپنا گھرچلایا نہ کچن اسے کیا پتا کہ عوام آدمی کو کن مشکلات کا سامنا ہے۔ پچاس ہزار روپے والے کے گھر کا نظام نہیں چلتا تو مزدور کا کیا حال ہوگا۔ اب لوگ تین وقت کے بجائے ایک وقت کا کھانا کھانے پر مجبور ہیں ان کی آمدن میں کمی جبکہ اخراجات میں اضافہ ہو گیا ہے جس سے ڈپریشن بڑھ رہا ہے۔ آج پاکستان کا ہر بوڑھا، بچہ،جوان، عورتیں، مرد نواز شریف کا دور یاد کر کے رو رہے ہیں۔ خدا وہ دن نہ لائے جب آزادکشمیر میں بھی یہ صورتحال پیدا ہو۔آزادکشمیر کے غیور عوام تقسیم کی سازشیں کو ناکام بنائیں گے۔ عمران خان اور اس کے حواری پاکستان میں بھی گھر جانے والے ہیں آزادکشمیر میں بھی انہیں گھر پہنچا کر چھوڑیں گے۔
واپس کریں