پاکستان میں نام نہاد تبدیلی کے جانے کا وقت آپہنچا ہے، وزیر اعظم آزادکشمیر و صدر مسلم لیگ ن راجہ محمد فاروق حیدر
No image چکار( 3جولائی 2021) وزیر اعظم آزادکشمیر و صدر مسلم لیگ ن راجہ محمد فاروق حیدر خان کا اپنے آبائی علاقے چکار کا دورہ،شدید آندی، طوفانی بارش کے باوجود سینکڑوں کارکنان کا والہانہ استقبال۔ پر جوش نعرے۔ تحصیل چکار سے سینکڑوں افراد مسلم لیگ ن میں شامل۔وارڈز کی سطح پرانتخابی کمیٹیاں تشکیل دی گئیں جبکہ حلقہ سا ت یوسی چکہامہ سے شریف مغل کی قیادت میں مغل فیملی، بالا سیٹھو سے سید ساجد شاہ کی قیادت میں سادات فیملی، گوندی گراں سے چوہدری اسماعیل کی قیادت میں چوہدری فیملی کے سرگردہ افراد کی دارالحکومت میں راجہ محمد فاروق حیدر خان کے اعزاز میں طارق آباد میں استقبالیہ تقریب اور حمایت کا اعلان کر دیا۔ حلقہ سات سے پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنما اور انتہائی بااثر سمجھے جانے والے راہنما چوہدری عبدالعزیز نے بھی وزیر اعظم آزاکشمیر کی حمایت میں اعلان کر دیا۔ گرین ہاؤس چکار میں کارکنان کا جمع غفیر امڈ آیا اس موقع پر مسلم لیگ ن سب ڈویژن چکار کے صدر راجہ آفتاب احمد خان و دیگر بھی موجو د تھے۔
وزیر اعظم آزاد کشمیر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں نام نہاد تبدیلی کے جانے کا وقت آپہنچا۔ آزادکشمیرمیں اللہ کے فضل سے محنت کے ذریعے جو کامیابیاں حاصل کیں وہ کسی صورت ضائع نہیں کرنے دیں گے۔ ان کو تیرہویں ترمیم پر بہت تکلیف تھی اس کی بدولت ہم نے مالیاتی خود مختاری حاصل کی۔ اپنی آمدن میں تین گناہ اضافہ کیاجس کے باعث ہم نے موجودہ بجٹ میں ملازمین کی تنخواہیں 35فیصد بڑھائیں۔ پولیس ملازمین کے مسائل یکسو کیے۔ مقبوضہ کشمیر کی تحریک کا مستقبل آزادکشمیر سے جڑاہے عمران خان تقسیم کشمیر کے ایجنڈے پر گامزن ہو کر ان لاکھوں شہداء کی قربانیوں سے راہ فرار اختیار کر رہا ہے جنہوں نے اپنی نسلیں پاکستان کے ساتھ شامل ہونے کے لیے قربان کر دیں۔ کھربوں روپے کا پیکج ٹھکرایا اپنے لخت و جگر تحریک آزادی کشمیر کے لیے قربان کیے انہیں ہم کیسے کہ سکتے ہیں کہ ماضی کو فراموش کر دیں۔ پانچ اگست کے بعد عمران خان کی حکومت کا کر دار مایوس کن رہا۔ آزادکشمیر کا موجودہ سیٹ اپ کو چھڑاگیا تو لوگوں کو خبر دار کرتا ہوں کہ ہمارا رقبہ اورآبادی پاکستان کے کئی اضلاع سے کم ہے۔ آزادکشمیر کو جو خصوصی حیثیت ملی ہے وہ تحریک آزادی کشمیر کی وجہ سے ہے اگر آزادکشمیر کو چھیڑا گیا تو تحریک آزادی کشمیر کو ناقابل تلافی نقصان پہنچے گا۔ راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ چکار کے لوگوں کی عزت افزائی پر شکر گزار ہوں آپ نے ہمیشہ میری حمایت کی مجھے ووٹ کے ذریعے کامیاب کیااور آپ کے اس ووٹ کی وجہ سے اللہ رب العزت نے توفیق دی کہ ہم نے ختم نبوت ﷺ کے لیے آئین میں ترمیم کی۔ کشمیر کونسل جیسے ظالمانہ عمرانہ طرز کے نظام کو ختم کیا۔ مالیاتی خود مختاری حاصل کی اپنی آمدن میں تین گناہ اضافہ کیا۔ آزادکشمیر کا ترقیاتی بجٹ دوگنا ہوا تو ہر گاؤں تک اس کے ثمرات پہنچے۔اس کے ساتھ ساتھ ہم نے ایک منصوبہ بندی کے تحت تعلیمی اداروں میں میرٹ لایا جس سے سرکاری سکولوں میں پچیس فیصد داخلوں کی شرح میں اضافہ ہوا۔ پبلک سروس کمیشن کے ذریعے ہزاروں نوجوانوں کو میرٹ پر روزگار دیا۔ کبھی بھی آپ کے مینڈیٹ کو دھبہ نہیں لگنے دیا اور قومی سطح پر آزادکشمیر کے حقوق کے لیے پوری جرات کے ساتھ آواز اٹھائی۔ ریاستی تشخص اور عزت و قار کے ساتھ کوئی حرف نہیں آنے دیا۔

واپس کریں