الیکشن کمیشن نے ا نتخابی جلسوں کے دوران وفاقی وزیر گنڈا پور کی طرف سے ترقیاتی فنڈز ، سکیموں کے اعلان کا نوٹس لے لیا
No image مظفر آباد ( کشیر رپورٹ) آزاد جموں وکشمیر الیکشن کمیشن نے آزاد کشمیر میں تحریک انصاف کی انتخابی مہم کے حوالے سے میر پور اورکوٹلی کے انتخابی حلقوں میں ایک وفاقی وزیر کی طرف سے ترقیاتی منصوبہ جات کے اعلان کا نوٹس لیتے ہوئے آزاد کشمیر کے تمام ڈپٹی کمشنرز کو ہدایت کی ہے کہ پاکستان کی سیاسی جماعتوں کے رہنمائوں اور حکومتوں کو الیکشن کمیشن کے انتخابی ضابطہ اخلاق سے آگا ہ کرتے ہوئے انہیں اس کاپابند بنایا جائے، ضابطہ اخلاق کی خلاورزی کی صورت متعلقہ امیدوار کو نااہل بھی قرار دیا جا سکتا ہے۔
سیکرٹری الیکشن کمیشن محمد غضنفر خان کی طرف سے 3جولائی کو ڈپٹی کمشنرز کو جاری ہدایت نامے میں ایک وفاقی وزیر کے میر پور اور کوٹلی کے انتخابی جلسوں میں کئے گئے اعلانات کا حوالہ دیا گیا ہے۔الیکشن کمیشن کی طرف سے غیر ناشائستہ گفتگو کو بھی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے ماحول میں خرابی پیدا ہونے کا اندیشہ ہو سکتا ہے۔
قبل ازیں 3جولائی کو ہی پیپلز پارٹی آزاد کشمیر کے صدر چودھری لطیف اکبر نے چیف الیکشن کمشنر کے نام ایک درخواست میں ' پی ٹی آئی ' حکومت کے وفاقی وزیر امور کشمیرو گلگت بلتستان علی امین گنڈا پور کے دورے کے حوالے سے چیف انجینئر الیکٹری سٹی میر پور کو خط لکھا گیا کہ یکم سے چار جولائی تک بجلی منقطع نہ کی جائے، اس سے آزاد کشمیر کے ڈیپارٹمنٹ پر اثر انداز ہونے کی کوشش کی گئی ہے۔درخواست میں مزید کہا گیاکہ مزکورہ وفاقی وزیر نے پبلک میٹنگز کے میںحکومت پاکستان کی طرف سے ترقیاتی فنڈز،سکیموں کا بھی اعلان کیا ، جو کہ الیکشن کے ضابطہ اخلاق کی صریحا خلاف ورزی ہے۔
واپس کریں