آزاد کشمیر الیکشن کمیشن کے حکام کی چیف الیکشن کمشنر پاکستان سے ملاقات۔ آزاد کشمیر الیکشن کمیشن کا انتباہ
No image اسلام آباد ۔مظفرآباد(9جولائی 2021)سینئر ممبر آزاد جموں وکشمیر الیکشن کمیشن راجہ محمد فاروق نیاز اور ممبر الیکشن کمیشن فرحت علی میر نے چیف الیکشن کمشنر آف پاکستان سکندر سلطان راجہ سے ان کے آفس چیمبر میں ملاقات کی۔انہوں نے آزاد جموں و کشمیر قانون ساز اسمبلی میں مہاجرین جموں و کشمیر مقیم پاکستان کے 12 حلقہ جات کی انتخابی فہرستہا کی تیاری کے سلسلہ میں الیکشن کمیشن آف پاکستان کے تعاون کا شکریہ ادا کیا ۔ اسی طرح آزاد جموں وکشمیر قانون ساز اسمبلی کے آمدہ عام انتخابات 2021کے لیے مہاجرین جموں و کشمیر مقیم پاکستان کے بارہ حلقوں میں الیکشن کمیشن آف پاکستان کے افسران کو بطور ریٹرننگ افسر و اسسٹنٹ ریٹرننگ افسر تعینات کیا گیا ہے۔ چیف الیکشن کمشنر آف پاکستان نے یقین دہانی کروائی ہے کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان قانون کے مطابق انتخابات کے انعقاد میں آزاد جموں و کشمیر الیکشن کمیشن کے ساتھ مکمل تعاون کرے گا۔یہ بات سیکرٹری(ترجمان) آزاد جموں و کشمیر الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری ہونے والی پریس ریلیز میں بتائی گئی ہے۔
ترجمان آزاد جموں و کشمیر الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری ہونے والی پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ آزاد کشمیر کی سیاسی جماعتوں کے ساتھ ہونے والی میٹنگ میں فیصلہ ہوا تھا کہ آزاد جموں وکشمیر قانون ساز اسمبلی کے عام انتخابات 2021کے لیے آزاد جموں وکشمیر الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری شُدہ ضابطہ اخلاق کی بہرصورت پابندی کی جائے گی اور پاکستان سے سیاسی جماعتوں کے آنے والے نمائندگان وعمائدین انتخابی مہم کے دوران ضابطہ اخلاق کی مکمل پابندی کریں گے۔ جلسہ کے دوران کسی قسم کے اعلانات نہیں کیئے جائیں گے۔ اسی طرح پاکستان سے آنے والے سیاسی نمائندگان، عمائدین بھی اپنی سیاسی جماعت کے امیدواروں کے جلسوں کے دوران کسی قسم کے منصوبہ جات کے اعلانات نہیں کریں گے اور نہ ہی جلسوں کے دوران ناشائستہ زبان استعمال کر یں گے جس سے امن وامان کی صورتحال خراب ہونے کا احتمال ہو اسی تناظر میں آزاد جموں و کشمیر الیکشن کمیشن نے پاکستان اور آزاد کشمیر کی تمام بڑی سیاسی جماعتوں کے سربراہان کو ایک مرتبہ پھر ضابطہ اخلاق پر عملدرآمد کی غرض سے مکتوب جاری کرتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ تمام سیاسی جماعتیں، امیدواران اور پولنگ کاعملہ جو انتخابی عمل میں شریک ہواس بات کو یقینی بنائے کہ انتخابات کا عمل منصفانہ، غیر جانبدارانہ اور انتہائی شفاف انداز میں وقوع پذیر ہواور رائے دہندگان آزادانہ طور پر اپنا حق رائے دہی استعمال کر سکیں۔ اورتمام سیاسی جماعتوں، امیدواران اور ان کے ہمدردوں پر لازم ہے کہ انتخابی مہم نہایت عمدہ طریقے سے ضابطہ اخلاق کے مطابق چلائیں۔ تمام سیاسی جماعتیں ضابطہ اخلاق کی شقوں کو مد نظر رکھتے ہوئے کسی بھی قسم کا مالیاتی، ترقیاتی پیکیج کا اعلان نہیں کریں گی اور نہ ہی ان کے امید واران اور ہمدردوں کی جانب سے ایسا کوئی اعلان کیا جائے گا۔ الیکشن کمیشن امید کرتا ہے کہ ضابطہ اخلاق پر اس کی اصل روح کے مطابق عمل کیا جائے گا۔ نا زیبا زبان اور قابل اعتراض نعروں اور کسی بھی امیدوار کی کردار کشی سے اجتناب برتا جائے گا۔ اسی طرح حکومت آزاد جموں و کشمیر، وفاقی اور صوبائی حکومتیں بھی ضابطہ اخلاق پر عملدر آمد کو یقینی بنائیں گی تا کہ انتخابات منصفانہ اور شفاف انداز میں منعقد ہو سکیں۔ یہاں یہ امر بھی انتہائی اہم ہے کہ انتخابی مہم کے دوران ضابطہ اخلاق کی کسی بھی شق کی خلاف ورزی امید وار کی نا اہلی پر منتج ہو گی۔

واپس کریں