انتخابات کو آزادانہ،منصفانہ، غیر جانبدارانہ بنانے کے لیے تمام تر وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔چیف الیکشن کمشنر آزاد کشمیر
No image اسلام آباد ( 10 جولائی 2021) آزادجموں و کشمیر کے چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) عبد الرشید سلہریا نے کہا ہے کہ پاک فوج اور رینجرز انتخابات کے دوران سیکیورٹی کی ذمہ داریاں انجام دیں گے۔ انتخابات کو آزادانہ،منصفانہ اور غیر جانبدارانہ بنانے کے لیے تمام تر وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔انتظامیہ ڈسٹرکٹ ریٹرننگ افسران اور ریٹرننگ افسران کے ساتھ تعاون کو یقینی بنائے۔الیکشن کمیشن کے ارکان کسی قسم کے دباو کو خاطر میں نہ لائیں۔تمام سیاسی جماعتوں کے سربراہان،وفاقی وزراء اور امیدوار ضابطہ اخلاق پر عملدرآمد کو یقینی بنائیں۔چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) عبدالرشید سلہریا نے ان خیالات کا اظہار اسلام آباد میں آزادجموں و کشمیر کے ڈسٹرکٹ ریٹرننگ افسران اور پاکستان میں موجود قانون ساز اسمبلی کے 12 حلقوں کے ریٹرننگ افسران کے اعلی سطح کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں سینئر ممبر الیکشن کمیشن راجہ فاروق احمد نیاز، ممبر الیکشن کمیشن فرحت علی میر اور سیکرٹری الیکشن کمیشن محمد غضنفر نے بھی شرکت کی۔
اجلاس میں ڈسٹرکٹ ریٹرننگ افسران اور ریٹرننگ افسران نے انتخابات کے منصفانہ انعقاد کے لیے تجاویز دیں اور خاص کر انتخابات کے دن سیکیورٹی کو موثر بنانے کی ضرورت پر زور دیا۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوے چیف الیکشن کمشنر نے واضح کیا کہ انتخابات کے موثر انعقاد کے لیے فول پروف اقدامات کئے جائیں گے اور اس سلسلے میں کسی بھی دباو کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔انہوں نے الیکشن کمیشن کے ارکان پر بھی زور دیا کہ وہ اپنے کام کو دلجمعی سے کریں اور اس عمل کو شفاف بنانے کے لیے تمام تر اقدامات کو بروئے کار لائیں۔انہوں نے کہا کہ ہمارے لئے یہ ایک چیلنج ہے جسے ہم نے موثر انداز میں انجام دینا ہے۔انہوں نے کہا مجھے اپنے ارکان پر بھرپور اعتماد ہے اور مجھے پورا یقین ہے کہ ہم ملکر تمام مشکلات پر قابو پالیں گے۔انہوں نے کہا تمام محکموں کے ساتھ تعاون کو موثر بنانے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ خاص طور پر انتظامیہ کے اعلی افسران کی ذمہ داری ہے کہ وہ ڈسٹرکٹ ریٹرننگ افسران اور ریٹرننگ افسران کے ساتھ موثر رابطے کو یقینی بنائیں۔انہوں نے کہا قوم کو اپنے ادارے پر اعتماد ہے اور ہم بھی انشاء اللہ ان کے اعتماد پر پورا اتریں گے۔
سینئر ممبر راجہ فاروق احمد نیاز نے اجلاس سے خطاب میں کہا کہ کسی کو بھی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر معاف نہیں کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ ہم نے موثر تعاون پر چیف الیکشن کمشنر پاکستان اور نادرا کا شکریہ ادا کیا ہے۔انہوں نے تمام ارکان سے کہا کہ وہ کسی قسم کے دباو کو خاطر میں نہ لائیں۔
ممبر الیکشن کمیشن فرحت علی میر نے اجلاس سے خطاب میں کہا کہ ریاست میں انتخابات تواتر سے ہو رہے ہیں ہم اسکے آزادانہ اور منصفانہ انعقاد کو یقینی بنانے کے لیے تمام تر موثر اقدامات کریں گے۔انہوں نے کہا کہ تمام ارکان اس چیلنج کو قبول کرتے ہوئے اپنی تمام تر صلاحیتوں کو بروئے کار لائیں۔ انہوں نے کہا کہ انشاء اللہ سیکیورٹی کے موثر اقدامات ہونگے عوام انتخابات کے دن آزادانہ طور پر اپنے حق رائے دہی کا استعمال کریں گے۔انہوں نے کہا کہ آزادجموں و کشمیر اور مقبوضہ کشمیر کے انتخابات میں واضح فرق ہے یہاں پر آزادانہ حق رائے دہی ہے جبکہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی ایما پر کنٹرولڈ انتخابات ہوتے ہیں جس میں عوام پر بھارتی فوج مسلط ہوتی ہے اور انہیں آزادانہ حق رائے دہی کا حق نہیں ہوتا ہے۔

واپس کریں