طالبان کے ساتھ مزاکرات ناکام تو کابل حکومت کو انڈیا سے اسلحے کی زیادہ ضرورت ہو گی، انڈیا میں افغان حکومت کے سفیر کا بیان
No image نئی دہلی( کشیر رپورٹ) انڈیا نے افغانستان میں خانہ جنگی کو تقویت پہنچانے کی کوششیں تیز کر دی ہیں ۔ انڈیا نے بڑے پیمانے پر افغانستان کی کابل حکومت کو اسلحے کی فراہمی جاری رکھی ہوئی ہے۔ انڈیا کی طرف سے کابل حکومت کو طالبان کے خلاف اسلحے کی فراہمی کی خود کابل حکومت نے تصدیق کی ہے۔
نئی دہلی میں افغان سفیر فرید ماموند زئی نے ایک مقامی انگریزی ٹی وی چینل سے گفتگومیں کہا ہے کہافغانستان کا کہنا ہے کہ اگر طالبان کے ساتھ اس کی بات چیت ناکام ہو جاتی ہے تو ضرورت پڑنے پر وہ بھارت سے فوجی امداد طلب کر سکتا ہے۔ کابل حکومت کی کمزور حالت کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ افغانستان میں اس وقت حالات بہت خراب ہو چکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ افغان فضائیہ کو بھارت کی مدد کی بھی ضرورت ہے۔فرید ماموندزئی نے کہا کہ بھارت نے ہمیں پہلے ہی سے تقریبا ایک درجن ہیلی کاپٹرز فراہم کر رکھے ہیں، اس کے علاوہ بھی انڈیا افغان فورسز کو عسکری ساز و سامان فراہم کرتا رہا ہے۔
واپس کریں