5 اگست کو ''یوم استحصال '' منایا جائے،کشمیری اپنے بنیادی حق پر'' شب خون'' نہیں مارنے دیں گے، وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان
No image مظفرآباد( 3اگست2021) وزیراعظم آزاد حکومت ریاست جموں وکشمیر و صدر مسلم لیگ ن آزاد جموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے ریاست جموں وکشمیرکے دونوں اطراف کے کشمیریوں، پاکستان میں مقیم مہاجرین جموں وکشمیر اوربیرون ممالک مقیم کشمیری ڈائسپورہ سے 5 اگست کو ''یوم استحصال '' بھرپور قوت کے ساتھ منانے کی اپیل کی ہے اور کہا ہے کہ دنیا بھر میں آباد کشمیری اس روز عالمی طاقتوں اور اقوام متحدہ پر واضح کر دیں کہ ریاست کے عوام اپنے بنیادی حق پر کسی کو شب خون نہیں مارنے دیں گے اور آزادی کے حصول تک جدوجہد جاری رکھیں گے۔ اپنے ایک بیان میں راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ5 اگست کا دن ریاست کی تاریخ میں ہمیشہ سیاہ حروف سے لکھا حائے گا جب2019 میں اسی دن ہندوستان نے تمام عالمی قوانین، انسانی اقدار اور اقوام متحدہ کی قرادادوں کی دھجیاں بکھیرتے ہوئے مقبوضہ جموں وکشمیر کے عوام سے اُن کی شناخت چھین لی،اور مقبوضہ ریاست کو دنیا کی ایک بڑی اوپن جیل میں تبدیل کر دیا۔ راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ 5 اگست2019 کو ہندوستان نے جو اقدامات اٹھائے اور جس کا اطلاق اس نے اکتوبر2019 میں کیا وہ بنیادی طور پرکشمیریوں سے ان کی شناخت، ان کی زبان، ان کی تہذیب، ان کا رہن سہن چھیننے کا ایک مذموم منصوبہ تھا۔ ہندوستان کا خون آشام وزیراعظم جو گجرات کے لوگوں کا قاتل ہے وہ اس کی تکمیل کررہا ہے لیکن ریاست جموں وکشمیر کے اندر بسنے والے مسلمان،ہندو، سکھ، بدھ سب اقوام اس سازش سے آشنا ہو چکے ہیں کہ کس طرح سے ان کی زمینوں پر قبضہ کیا جانا اورانہیں اپنے ہی ملک کے اندر دوسرے درجے کا شہری بنانا مقصود ہے۔انہوں نے کہا کہ میں اقوام عالم خصوصاً P5 ممالک اور انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں سے درخواست کرتا ہوں کہ وہ حالات کی سنگینی کا ادراک کریں، مقبوضہ جموں وکشمیرمیں مداخلت کریں اور ہندوستان کواس کے جارحانہ اور ظالمانہ اقدامات سے روکیں کے لیے فوری اقدامات کیے جانے چاہیں، راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ کشمیری اپنے تشخص کی بحالی کے لیے کشمیری عوام اس وقت تک اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے جب تک وہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے تحت اپنا تسلیم شدہ حق خودارادیت حاصل کر کے اپنی آزادانہ مرضی سے اپنے مستقبل کا فیصلہ نہیں کر لیتے۔ راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ میں بار بار یہ کہہ چکا ہوں کہ ریاست جموں وکشمیر کے تشخص اور آزاد کشمیر کے اسٹیٹس کو خطرات لاحق ہیں، اور ریاست کی تقسیم کی سازشیں ہو رہی ہیں، جس کے تانے بانے عمران خان کی حکومت کے ساتھ ملتے ہیں جو آزاد کشمیر کا تشخص ختم کر کے ریاست کی تقسیم کے لیے راہ ہموار کرنا چاہتی ہے۔ عمران خان کی جو حکومت آزاد خطہ کے عوام کو اُن کا“حق رائے دہی‘ دینے کیلئے تیار نہیں وہ ریاستی عوام کا حق خودارادیت دلانے کے لئے کسی صورت مخلص نہیں ہو سکتی۔ راجہ محمدفاروق حیدر خان نے کہا کہ ریاست جموں وکشمیر کے عوام نے اپنا مستقبل قائد اعظم ؒکے پاکستان کے ساتھ منسلک کیا تھا جس کے لیے انہوں نے اپنا جان و مال سب کچھ لُٹا دیا اور آج بھی اپنے سروں پر پاکستان کا پرچم باندھ کر قربانیاں دے رہے ہیں۔پاکستان کے عوام جو ہمیشہ کشمیریوں کی پشت پر کھڑے رہے انہیں اور کشمیریوں کو ان سازشوں پر گہری نظر رکھنا ہو گی۔راجہ محمد فاروق حیدرخان نے کہا کہ ریاست جموں وکشمیر کے عوام اپنے حق رائے شماری کی خاطر تاریخ کی بے مثال قربانیاں دے چکے ہیں اور دے رہے ہیں، جنہیں ہم فراموش نہیں کر سکتے اور ہماری جدو جہد کامیابی کے حصول تک جاری رہے گی۔ صدر مسلم لیگ ن راجہ محمد فاروق حیدر خان نے آزاد کشمیر، پاکستان اور دنیا بھر میں مسلم لیگ ن آزاد جموں وکشمیر کے عہدے داران اور کارکنان سے کہا کہ وہ 5/ اگست کو بھرپور طریقے سے یوم استحصال پر اجتماعات منعقد کر کے مقبوضہ جموں کشمیر کے حریت پسند عوام کے ساتھ مکمل یکجہتی کا اظہار کریں ۔

واپس کریں