ہندوستانی مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقو ق کی خلاف ورزیوں اور ڈیموگریفک تبدیلی سے سلامتی کا بحران پیدا ہو رہا ہے۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ
No image آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بدترین ریاستی جبر جاری ہے اور مقبوضہ وادی میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بحران پیدا کر رہی ہیں۔ مقبوضہ کشمیر میں سلامتی بحران علاقائی امن کے لیے خطرہ ہے، کشمیری عوام کی خواہش اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق مسئلہ کشمیر کا حل خطے میں امن و استحکام کے لیے ضروری ہے، کشمیریوں کی امنگوں کے تحت تنازعات کے حل کے بغیر امن ممکن نہیں۔جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں فوجی محاصرہ، ڈیموگرافک تبدیلی سکیورٹی کرائسز پیداکررہی ہیں۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اپنے بیان میں کہا کہ '' غیر انسانی فوجی محاصرے کا جاری رہنا ، آبادیاتی تبدیلیاں لانے کی تدبیریں اور انسانی حقوق اور بین الاقوامی قوانین کی سنگین خلاف ورزیاں IIOJ & K میں انسانی اور سیکورٹی بحرانوں کو جاری رکھتی ہیں جو علاقائی سلامتی کو نقصان پہنچاتے ہیں۔کشمیر کے تنازعے کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں اور کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق خطے میں پائیدار امن اور استحکام کے لیے ضروری ہے''۔
آرمی چیف کا یہ بیان اس موقع پر جاری ہوا ہے کہ جب بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کے دو سال مکمل ہونے پر پاکستان بھر میں یومِ استحصالِ کشمیر منایا جارہا ہے جب کہ مقبوضہ وادی میں بھی مکمل ہڑتال ہے۔
واپس کریں