پاکستان کو کووڈ کے حوالے سے بدستور ریڈ لسٹ میں ر کھنے کے برطانوی فیصلے کی وسیع پیمانے پر مذمت
No image لندن 27اگست2021( کشیر رپورٹ)برطانوی حکومت نے گزشتہ روز غیر متوقع طور پر پاکستان کو بدستور کووڈ کے حوالے سے ریڈ لسٹ میں رکھنے کا اعلان کیا ہے جس کا مقصد سفری پابندیاں ہیں ۔ برطانوی حکومت کے اس فیصلے کی وسیع پیمانے پر مخالفت کی جا رہی ہے اور برطانوی حکومت کے اس اقدام کو تعصب پر مبنی قرار دیا جا رہا ہے۔
برطانوی حکومت کے اس فیصلے کے ناقدین کا کہنا ہے کہ برطانوی ہوم ڈیپارٹمنٹ کی سیکرٹری پریٹی پٹیل ہندوستان نژاد ہیں اسی لئے کووڈ کی خراب صورتحال ہونے کے باوجود ہندوستان کو تو پہلے ہی برطانیہ کی ریڈ لسٹ سے نکال دیا گیا ہے اور پاکستان کو بدستور ریڈ لسٹ میں رکھتے ہوئے دوہرے معیار کا مظاہرہ کیا جا رہا ہے۔
پاکستان نژاد کئی برطانوی شہریوں کا کہنا ہے کہ برطانوی حکومت کے اس تعصب خیز فیصلے کی وسیع پیمانے پر مذمت کی جا رہی ہے۔ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ برطانوی حکومت کے کئی عہدیدار ہندوستان نژاد ہونے کے وجہ سے جان بوجھ کر پاکستان کے خلاف طرز عمل ظاہر کرتے ہیں۔برطانیہ کی کووڈ کے حوالے سے ریڈ لسٹ میں پاکستان،ترکی،افغانستان،بنگلہ دیش سمیت 62ملک شامل ہیں۔

واپس کریں