عمران خان کی مداخلت سے بنائی گئی آزادکشمیر حکومت کے عزائم خطرناک ہیں،راجہ فاروق حیدر خان
No image میرپور( کشیر رپورٹ)سابق وزیراعظم و صدر مسلم لیگ ن آزاد جموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا ہے کہ عمران خان کی حکومت 13 ترمیم کو ختم کر کے آزاد کشمیر کے عوام کے حقوق واپس چھیننا چاہتی ہے، کشمیر کونسل کو بحال کر کے لوٹ مار کے راستے دوبارہ کھولنا چاہتے ہیں، آزاد کشمیر اسمبلی میں گلگت بلتستان کو صوبہ بنانے کی حمایت میں قرارداد لانے کی تیاری کررہے ہیں تاکہ ریاست کی تقسیم کے منصوبے کو عملی جامہ پہنایا جا سکے،آزاد کشمیر میں دھونس اورعمران خان کی مداخلت سے بنائی گئی حکومت کے عزائم خطرناک ہیں، خطے کے عوام کو قومی غیرت کا مظاہرہ کرتے ہوئے ان خرابیوں اور سازشوں کا راستہ روکنا ہو گا، میرپورمیں ایک ہی خاندان کی سیاسی اجارہ داری کا راستہ10 اکتوبر کو عوام اپنے ووٹ سے ذریعے سے روکیں، میرپور کے لوگوں کے حقوق کے لئے مسلم لیگ ن کی حکومت نے ہر فورم پر آوا زاٹھائی ہے، 60 کروڑ روپے ہم نے میرپور کے ترقیاتی منصوبہ جات کے لئے مختص کئے۔
وہ میر پور کے سیکٹرڈی 4 اور سی4 میں مسلم لیگ ن کی کارنر میٹنگزسے خطاب کر رہے تھے۔ ان میٹنگزسے سابق ایڈمنسٹریٹرطاہر مراز، راجہ محمد زراعت خان، چوہدری محمد ارشد، راجہ قیصر خان، چوہدری مطلوب آف یو کے، راجہ عمران ظفر، راجہ کامران منظور، شکیل احمد، شیراز جنجوعہ، وسیم مجیدزرگر، محمد افضل زرگر، ملک ساجدحسین، سہیل ملک، راجہ نصیر موجو اور دیگزلیگی رہنمائوں نے بھی خطاب کیا۔
صدر مسلم لیگ ن راجہ محمد فاروق حیدر خان نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ مانسہرہ / میرپور ایکسپریس کا منصوبہ عمران خان کی حکومت نے ختم کیا، میرپور کے انڈسٹریز زون کو کے پی کے میں لے گئے، میں نے ہر فورم پر میرپور کے حقوق کی بات کی، میرپور میں پلاٹوں کا کاروبار میں نے نہیں کیا اور نہ کسی کو کرنے دیا،میرپور کے لوگوں کے حقوق کا سودا نہیں کیا، سوئی گیس کی فراہمی کے لئے ہماری حکومت نے رقم رکھی تھی لیکن مرکزی حکومت نے اس کے راستے میں رکاوٹیں کھڑی کیں۔ انہوں نے کہا کہ میں اپنے آ پ کو احتساب کے لئے پیش کرتا ہوں آئیں مجھ سے احتساب شروع کریں، ہم نے اللہ کے فضل وکرم سے عوام کی خدمت کی ہے اور ہمیں اپنی پانچ سالہ کارکردگی پر فخر ہے۔ راجہ فاروق حیدر خان نے کہا کہ جب ہم حکومت سنبھالی تو 22ارب کی حکومت مقروض تھی، جب ہم نے حکومت چھوڑی ہے تو 20 ارب کی خطیر رقم خزانے میں موجود ہے، مسلم لیگ ن کی حکومت نے آزاد خطے کو مالی طور پر مستحکم کیا، آزاد کشمیر کے ملازمین کو ماضی میں کئی کئی ماہ تک تنخواہیں نہیں ملتی تھیں، لیگ کی حکومت میں کبھی ہم نے اورڈرافت نہیں لیا اور نہ ہی کبھی ملازمین کی تنخواہیں رکیں، ہم نے مالی نظم و ظبط قائم کیا، آزاد خطے میں انصاف کو یقینی بنانے کے لیے اقدامات کئیے، این ٹی ایس اور پبلک سروس کمیشن کے ذریعے میرٹ اور اہلیت کی بنیادیں رکھیں،جس سے غریب لوگوں کے پڑھے لکھے نوجوانوں کو روزگار کے مواقع میسر آئے، ختم نبوت کے قانون کو آزاد کشمیر کے آئین میں شامل کیا۔ انہوں نے میرپور کے لوگوں سے کہا کہ وہ 10اکتوبر کو ووٹ کے لیئے باہر نکلیں اور قومی غیرت و حمیت کا مظاہرہ کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے امیدوار کو کامیاب کریں۔
واپس کریں