پونچھ کے مینڈھر علاقے میں فوجی آپریشن کا9واں دن، خوفزدہ انڈین آرمی کی دور سے شدید گولہ باری، فائرنگ
No image سرینگر( کشیر رپورٹ) مقبوضہ کشمیر کے مینڈھر علاقے میں کشمیری حریت پسندوں کے خلاف ہندوستانی فوج کا آپریشن مسلسل نو دن سے جاری ہے، اس دوران انڈین حکام کے مطابق نو انڈین فوجی ہلاک ہوئے ہیں۔اطلاعات کے مطابق ہندوستانی فوج اس علاقے میں بھاری ہتھیاروں سے شدید گولہ باری،فائرنگ کر رہی ہے جہاں انہیں حریت پسندوں کی موجودگی کا شک ہے۔ تاہم ہندوستانی فوج اس مقام کے قریب جانے سے خوفزدہ ہے جہاں انہیں شک ہے کہ وہاں حریت پسند موجود ہیں۔ ہندوستانی فوج اب فضائی فوج کی مدد سے اس علاقے میں بمباری کرنے کی تیاری میں ہے۔انڈیا کے آرمی چیف جنرل ایم ایم نروانے نے منگل کو اس علاقے کا دورہ کیا۔اس موقع پر ہندوستانی روزنامہ '' ہندوستان ٹائمز '' نے برکنگ نیوز چلائی کہ انڈین فوج سے جھڑپ میں چھ حریت پسند شہید ہوئے ہیں جبکہ تین چار باقی رہ گئے ہیں لیکن یہ خبر جھوٹی نکلی۔
معصوم، غیر تربیت یافتہ کشمیری نوجوانوں کو ہزاروں انڈین فوجی قتل کر کے جشن مناتے ہیں، لگتا ہے کہ اب تربیت یافتہ فریڈم فائٹر انڈین فوج کو ٹکرے ہیں، خود انڈین میڈیا کے مطابق 9انڈین فوج ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ دیگر ذرائع کے مطابق تعداد اس سے زیادہ ہے۔انڈین فوج کا خوف دیدنی ہے۔بھارتی حکومت نے کشمیر میں ہائی الرٹ جاری کیا ہے۔انڈین انٹیلی جنس نے دعوی کیا ہے کہ ''حرکت 313'' ایک نیا عسکریت پسند گروہ حکومتی انفراسٹرکچر اور ڈیمز پر حملے کر سکتا ہے۔ اوڑی 1 اور اوڑی 2 ہائیڈل پاور پلانٹس کو نشانہ بنایا جا سکتا ہے۔
واپس کریں