عمران خان کا خوف چھلک رہا ہے، ایک ہی جلسے سے گھبرا گیا ہے۔ مریم نواز
No image کراچی۔مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہکہ نریندر مودی کی کامیابی کی دعائیں عمران خان نے مانگیں، کلبھوشن کے لئے آرڈیننس اور وکیل کرو تم اور مودی کی زبان ہم بول رہے ہیں؟ بھارت کوسلامتی کونسل میں ووٹ دوتم اورمودی کی زبان ہم بول رہے ہیں؟کراچی میں اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم)کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے کہا کہ جب جواب مانگا جاتا ہے تو کہا جاتا ہے کہ آپ غدارہیں،ہمیں غداری والی کہانیاں نہیں سناو، ایک فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ ہوا تو غداری سامنے آجائیگی۔مریم نواز نے کہا کہ پاکستان کی فوج ہماری ہے، فوج نواز شریف کی ہے،یہاں بیٹھے سب لوگوں کی ہے۔
انہوں نے کہا کہ گزشتہ روز ایک شخص چیخ چیخ کر اپنی ناکامی اور شکست کا ماتم کررہا تھا، ابھی ایک جلسہ ہوا اور تم گھبرانا شروع ہوگئے، ایک ہی جلسے میں دماغی توازن کھو بیٹھے ہو، وزیراعظم کی کرسی کی ہی لاج رکھ لی ہوتی، تقریر کے ایک ایک لفظ اور آپ کی حرکات سکنات سے خوف جھلک رہا تھا اور یہی خوف آپ کے چہرے پر قوم دیکھنا چاہتی ہے۔کراچی میں پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ کون نہیں جانتا کہ قومی احتساب بیورو عمران خان کے اشارے پر کام کرتی ہے، نیب ہی نہیں وفاقی تحقیقاتی ایجنسی اور دیگر ادارے آپ کے قبضے میں ہیں۔
مریم نواز نے کہا کہ نواز شریف نے دھرنے میں پریشر نہیں لیا،تمہیں حسرت رہے گی نواز شریف نے کیوں تقریر میں تمہارا نام نہیں لیا،کیوں کہ بڑوں کی لڑائی میں بچوں کا کوئی کام نہیں ہے، آپ پہلے تابعدار ملازم تھے اب وزیراعظم کی کرسی پر بیٹھے ہو۔مریم نواز نے کہا کہ وہ عمران خان کینام لینا پسند نہیں کرتیں اور نہ ہی اسے وزیراعظم تسلیم کیا ہے،مجھے کہا کہ بچی ہے اور نانی ہے، میں دو بچوں کی نانی ہوں اور فخر کرتی ہوں، یہ بہت خوبصورت رشتہ ہے، آپ نے یہ بات کرکے مقدس رشتے کی توہین کی ہے۔ بلاول بڑی بہن کی طرح میری عزت کرتا ہے،وقت آئے گا کہ الیکشن میں ہم حریف ہوں گے لیکن آپ کی طرح دشمن نہیں ہوں گے،بلاول سے کہا کہ آ مل کر وعدہ کریں، ہم انتخابی میدان میں لڑیں گے لیکن آپس میں نہیں لڑیں گے۔
انہوں نے کہا کہ یہ گوجرانوالا میں آل پارٹیز کانفرنس کی تقریر سے آپے سے باہر ہوگئے، اس تقریر کو نشر کرنے پر پابندی تھی، گوجرانوالا جلسے کے اشتہار میں نواز شریف کا چہرے ہٹانے کا کہا گیا،اتنے بزدل اور گھبراگئے ہو کہ نواز شریف کی تقریر نہیں سناسکتے تو اس پر تبصرے کرنے کا حق حاصل نہیں ہے، تقریر ٹی وی پر نہیں چلی تو کیا چھپ چھپ کر تقریر سن رہے تھے۔مریم نواز نے کہا کہ کراچی والوں نے جتنی محبتیں مجھ پر نچھاور کیں، پوری زندگی اس محبت کا قرض ادا نہیں کرسکوں، انشااللہ کراچی سے رفاقت پوری زندگی
نبھائوں گی۔

واپس کریں