برصغیر،بحرالکاہل میں مفادات کے تحفظ کے لئے چین کے خطرات کا مقابلہ کرنے کی ضرورت ہے، امریکی وزیر خارجہ پومپیو کا دورہ بھارت
No image نئی دہلی۔ امریکی وزیر خارجہ مائک پومپیو نے کہا ہے کہ ہندوستان اور امریکہ کو مشترکہ طور پر برصغیر پاک و ہند بحر الکاہل میں اپنے مفادات کے لئے چین کے خطرات کا مقابلہ کرنے کی ضرورت ہے۔امریکی وزیر خارجہ دو روز ہ دورے پر بھارت پہنچے ہیں۔ اس موقع پر دونوں ملکوں کے درمیان بیسک ایکسچنج اینڈ کوآپریشن ایگریمنٹ (بی ای سی اے) پر دستخط کئے جائیں گے۔ اس معاہدے پر دستخط ہونے سے بھارت کو امریکا کے سیٹلائٹ ڈیٹا تک رسائی مل سکے گی، جس سے اسے اپنے ڈرونز اور میزائل سسٹم کو خامیوں سے زیادہ پاک بنانے میں مدد ملے گی۔پومپیو بھارتی وزیر خارجہ سبرا منیم جے شنکر اور وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کے ساتھ وزارتی اجلاس میں شریک ہوں گے اور اس کے کے علاوہ بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی اور سلامتی امور کے مشیر اجیت ڈوبھال سے بھی ملاقات کریں گے۔
امریکی وزارت دفاع کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں ملکوں کے وزرا کے درمیان ہونے والی بات چیت چار نکات پر مرکوز رہے گی، جن میں علاقائی سلامتی و تعاون، دفاعی معلومات ایک دوسرے سے شیئر کرنا، عسکری تعاون اور دفاعی ساز و سامان کی تجارت شامل ہیں۔ نومبر میں کواڈ گروپ کے تحت امریکا، بھارت، جاپان اور آسٹریلیا کی بحریہ بھارت کے ساحل کے قریب مشترکہ مشقوں میں حصہ لیں گی۔ دونوں ملکوں کے درمیان دفاعی تجارت میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ امریکی حکومت کے مطابق بھارت امریکا سے 20 ارب ڈالر کا فوجی ساز و سامان خرید چکا ہے۔اطلاعات کے مطابق بھارتی وزیر خارجہ جے شنکر نے کہا ہے کہ بھارت کو چین کی طرف سے خطرے کا سامنا ہے ۔ امریکہ اور بھارت کے درمیان نئے جنگی سمجھوتے چین کے علاوہ پاکستان کے لئے بھی خطرات کا باعث ہیں۔بھارت کو جنگی لحاظ سے جدید ٹیکنالوجی کی فراہمی سے امریکہ بھارت کے خطے میں جارحانہ وعزائم میں اس کی نمایاں مدد کر رہا ہے۔
واپس کریں