نواز شریف اور برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن کی جوئیڈن کو صدارتی الیکشن میں کامیابی پر مبارکباد
No image لندن۔پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد میاں محمد نواز شریف نے جو بائیڈن کو امریکہ کے صدارتی الیکشن میں کامیابی پر مبارکباد کا پیغام دیا ہے۔نوا زشریف نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ جوبائیڈن کی کامیابی امریکہ کے لوگوں اور جمہوریت کے لئے تاریخی ہے ۔نواز شریف نے توقع ظاہر کی ہے کہ جو بائیڈن کی قیادت میں امریکہ اور پاکستان کے درمیان اچھے تعلقات کو فروغ حاصل ہو گا۔
برطانیہ کے وزیر اعظم بورس جانسن نے بھی امریکہ کے منتحب ہونے والے نئے صدر جو بائیڈن اور نائب صدر کمالا ہیرس کو کامیابی پر مبارکباد دی ہے۔برطانوی وزیر اعظم نے ایک بیان میں کہا ہے کہ کمالا امریکہ کی پہلی افریقی نژاد امریکی اور پہلی خاتون نائب صدر بنی ہیں جو کہ ایک ’یادگار لمحہ‘ ہے،بورس جانسن نے کہا کہ وہ بائیڈن انتظامیہ کے ساتھ قریبی تعلقات اور ایک ساتھ مل کر کام کرنے کے لیے پرامید ہیں۔
ڈیموکریٹک پارٹی کے امیدوار جو بائیڈن نے متوقع نتائج کے مطابق امریکہ کا 59واں صدارتی انتخاب جیتا ہے۔ انھیں ریاست پینسلوینیا میں کامیابی کے بعد 20 الیکٹورل کالج ووٹ حاصل ہوئے ہیں جس کے بعد ان کی کل الیکٹورل ووٹ 273 ہو گئے ہیں جبکہ امریکی صدر منتخب ہونے کے لیے 270 الیکٹورل ووٹوں کی ضرورت ہوتی ہے۔ امریکی مودی کہلانے والے ڈونلڈ ٹرمپ شکست سے دو چار ہوگئے ہیں۔جو بائیڈن امریکہ کے 46 ویں صدر ہوں گے۔اپنی کامیابی کے بعد جو بائیڈن کا کہنا ہے کہ اس عظیم ملک کی قیادت کرنا میرے لیے اعزاز کی بات ہے، آگے ہمیں مشکل چیلنجز درپیش ہیں۔نئے منتخب امریکی صدر جوبائیڈن نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ جنہوں نے مجھے ووٹ دیا یا نہیں دیا، میں سب کا صدر ہوں،میں امریکی عوام کے اعتماد پر پورا اتروں گا۔جوبائیڈن نے کامیابی کے بعد اپنے خطاب میں کہاکہ امریکی تاریخ میں پہلی بار کسی صدارتی امیدوار کو 74 ملین ووٹ ملے ہیں
واپس کریں