کپواڑہ کے مچل سیکٹر میں ایل او سی کے قریب جھڑپ میں چار بھارتی فوجی ہلاک دو زخمی، تین مجاہد شہید
No image سرینگر۔کشمیر کو غیر فطری اور کشمیریوں کو جابرانہ طور تقسیم کرنے والی کنٹرول لائین کے قریبی علاقے میں فریڈم فائٹرز سے جھڑپ میں چاربھارتی فوجی ہلاک ہو گئے جبکہ بھارتی فوج نے تین مجاہدین کی شہادت کا دعوی کیا ہے۔بھارتی فوج کے ترجمان نے سرینگر میں صحافیوں کو بتایا کہ کپواڑہ کے مچل سیکٹر میں کنٹرول لائین سے ساڑھے تین کلومیٹر دور رات ایک بجے ہونے والی جھڑپ میںتین بھارتی فوجی اور بارڈر سیکورٹی فورس( بی ایس ایف) کا ایک فوجی ہلاک اور دو بھارتی فوجی زخمی ہوئے ہیں۔ترجمان کے مطابق جھڑپ میں تین مجاہد شہید ہوئے۔رات ایک بجے شروع ہونے والی جھڑپ صبح چار بجے تک جاری رہی۔
کے ایم ایس کے مطابق بھارتی فوجیوں نے اپنی ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی میں آج ضلع کپواڑہ میں تین کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا ۔ فوجیوں نے نوجوانوں کو ضلع کے علاقے مژھل میں محاصرے اورتلاشی کی ایک کارروائی کے دوران شہید کیا۔ اس سے پہلے اسی علاقے میں اےک حملے کے دوران ایک افسر سمیت بھارتی فوج کے تین اور بارڈر سکیورٹی فورس کاایک اہلکار ہلاک اوردو شدید زخمی ہوگئے تھے۔ہلاک ہونے والے فوجی افسر کی شناخت لیفٹننٹ آہوجا کے طورپر ہوئی ہے۔ بھارتی بارڈر سیکیورٹی فورس کے ڈپٹی انسپکٹر جنرل آر موتھو کرشنن نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ نو جوان فوج کے ساتھ ایک جھڑپ کے دوران مارے گئے۔ آخری اطلاعات آنے تک علاقے میں فوجی آپریشن جاری تھا۔
واپس کریں