نواز شریف نے فوج کی کورٹ آف انکوائری رپورٹ کو مسترد کر دیا
No image لندن۔پاکستان مسلم لیگ(ن) کے قائد ،سابق وزیر اعظم پاکستان محمد نواز شریف نے کراچی کے واقعہ کے حوالے سے فوج کی کورٹ آف انکوائری رپورٹ کو مسترد کرتے ہوئے جونیئر افسران کی قربانی دینے کی روش کی مذمت کی ہے اور رپورٹ کو مسترد کیا ہے۔ نواز شریف نے ٹوئٹر پہ اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ ''کراچی واقعے کی انکوائری رپورٹ اصل حقائق پر پردہ ڈالنے کی ناکام کوشش ہے۔ خود کو بچانے کے لئے جونیئر افسران کو قربان کرنے کی یہ روش قابلِ مذمت ہے، رپورٹ ریجیکٹڈ''۔
واضح رہے کہ ' آئی ایس پی آر' کے حوالے سے منگل میں میڈیا میں یہ خبر جاری ہوئی کہ پاک فوج نے کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی گرفتاری کے واقعے پر آئی جی سندھ کے تحفظات کے معاملے کی انکوائری مکمل کرکے متعلقہ افسران کو معطل کرتے ہوئے ذمہ داریوں سے ہٹادیا گیا ہے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ'آئی ایس پی آر' کے مطابق ضابطہ کی خلاف ورزی پر افسران کے خلاف کارروائی جی ایچ کیو میں کی جائے گی۔'آئی ایس پی آر' کے مطابق آئی جی سندھ کے واقعے کی فوج کی کورٹ آف انکوائری مکمل کرلی گئی ہے جو آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے حکم پر کی گئی۔'آئی ایس پی آر' کا کہنا ہے کہ ان افسران نے جذباتی ردعمل کا اظہار کیا، افسران کو تحمل اور ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا چاہئے تھا۔آئی ایس پی آر کے مطابق مزید انکوائری متعلقہ ڈیپارٹمنٹس میں کی جائے گی۔
واپس کریں