نگروٹہ ٹول پلازہ کے واقعہ پر ہندوستانی وازارت خارجہ کا پاکستانی سفارت کار کو احتجاجی مراسلہ
No image نئی دہلی۔ہندوستانی وزارت خارجہ نے ہفتہ کو پاکستان کے سفارت کار کو طلب کر کے احتجاجی مراسلہ دیا ہے۔ہندوستان کا الزام ہے کہ جموں میں نگروٹہ کے ٹول پلازہ پہ ہلاک ہونے والے چار مسلح افراد کاتعلق جیش محمد سے تھا۔ ہندوستانی فوجی حکام نے نگروٹہ واقعہ کے بعد کہا تھا کہ ہتھیاروں کی تعداد سے معلوم ہوتا ہے کہ ہلاک ہونے والوں کا تعلق جیش محمد سے ہے۔ہندوستانی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا کہ ہندوستان دہشت گردی کے خلاف جنگ میں اپنی قومی سلامتی کے تحفظ کے لئے تمام ضروری اقدامات کر ے گا۔
واضح رہے کہ ہندوستانی حکومت پاکستان میں دہشت گردی کی مدداور معاونت کے ٹھوس ثبوت سامنے آنے اور اقوام متحدہ میں پیش کیئے جانے سے پریشانی کا شکار ہے اور نگروٹہ ٹول پلازہ کے واقعہ پر پاکستان سے احتجاج سے بھی ہندوستانی حکومت کی بوکھلاہٹ کا اندازہ ہوتا ہے۔یوں اب اس بات کا امکان پیدا ہوا ہے کہ پاکستان میں ہونے والی کسی بھی دہشت گردی پر پاکستانی وزارت خارجہ کی طرف سے ہندوستانی سفارت کار کو طلب کر کے اسے احتجاجی مراسلہ دیا جائے گا اور اقوام متحدہ کو بھی ہندوستان کی ان حرکات سے آگاہ کیاجائے گا۔
واپس کریں