امریکہ، آسٹریلیا،جاپان اور انڈیا کی بحیرہ عرب میں چین کے خلاف مشترکہ بحری جنگی مشقیں ختم ہو گئیں
No image نئی دہلی۔چین اور اس کے اتحادی ممالک کے خلاف بحیرہ عرب میں بھارت ، امریکہ ، آسٹریلیا اور جاپان کی '' مالا بار'' کے نام سے چار روزہ مشترکہ بحری مشقیں ختم ہو گئی ہیں۔ان مشقوں کے پہلے حصے میں مشترکہ جنگی مشقیں نومبر کے شروع میں خلیج بنگال میں ہوئی تھیں۔ان مشترکہ بحری جنگی مشق میںدو طیارہ بردار بحری جہاز اور متعدد فرنٹ لائن جنگی جہاز ، سب میرینز اور سمندری طیارے شامل تھے۔چار روزہ دوسرے مرحلے کی مشق میں ہندوستانی نیویس وکرمادتیہ کیریئرفائٹر گروپ اوردنیا کی سب سے بڑا جنگی جہاز امریکی بحریہ کے یو ایس ایس نیمزز کی شرکت بتائی جاتی ہے۔یہ دو طیارہ بردار بحری جہاز ، دوسرے بحری جہاز ، سب میرین اور شریک شریک بحری جہاز کے طیاروں کے ساتھرمگ 29 کاور ایف امریکی طیاروں ایفA-18 کی اترنے اور فلائٹ کرنے کی مشقیں شامل تھیں۔مشقوں میںآسٹریلیائی بحریہ کا HMAS بلارات ، ایک انزاک کلاس فریگیٹ تعینات جبکہ جاپانی بحریہ کا سرکردہ تباہ کن جے ایس مرسام شامل تھا۔یہ مشقیں اعلانیہ طور پر چین کے خلاف کی گئی ہیں۔ اس طرح امریکہ آسٹریلیا ،جاپان اور انڈیا کی بحری افواج کے ساتھ مل کر چین کے ارد گرد کے سمندری علاقوں میں چین کو چیلنج کرنے کی جارحانہ کاروائیاں کر رہا ہے۔
واپس کریں