سماہنی میں ہندوستانی فوج کی ٹارگٹ فائرنگ سے شہید ہونے والے آزاد کشمیر کے شہری کی تدفین،قبر پر پاکستان اور آزاد کشمیر کے پرچم نصب
No image سماہنی ،آزاد کشمیر ( بدراسلام جعفری ) آزاد کشمیر کے سماہنی علاقے کے گائوں گڑھا مہری میں گزشتہ روز ہندوستانی فوج کی ٹارگٹ فائرنگ سے شہید ہونے والے شہری انصر محمود چودھری کی نماز جنازہ جمعرات کو ادا کی گئی۔نماز جنازہ میں ڈپٹی کمشنر بھمبر راجہ قیصر اورنگزیب،سابق امیدوار اسمبلی سربراہ تحریک انصاف حلقہ سماہنی چوہدری محمد رزاق،تحصیلدار سماہنی کلیم عباس،سابق امیدوار اسمبلی جماعت اسلامی حلقہ سماہنی چوہدری محمد کریم،کشمیر پریس کلب رجسٹرڈ کے صحافیوں امجد عزیز کاشر،بدرالسلام جعفری،شبیر احمد شیخ مختلف مکاتب فکر سمیت کثیر تعداد میں عوام علاقہ نے شرکت کی ۔ شہیدانصر محمود چودھری کو پورے سرکاری اعزاز کے ساتھ سپرد خاک کیا گیا۔ شہید کے قبر پر پاکستان اور آزادکشمیر کے قومی پرچم لگائے گئے۔
شہید انصر محمود کی چند سال قبل شادی ہوئی اور اس کی تین معصوم بیٹیا ں بھی ہیں،حکومت آزادکشمیر کے جانب سے ڈپٹی کمشنر بھمبر راجہ قیصر اورنگزیب نے شہید کے ورثا کو 10لاکھ کا امداد ی چیک پیش کیا ا س موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر بھمبر نے کہا کہ شہادتوں کا سلسلہ اندرون کشمیر سمیت کنٹرول لائن پر جاری ہے شہید انصر محمود میرا پڑوسی اور میرے بیٹو ں جیسا تھا وادی سماہنی شہیدوں اور غازیوں کی سرزمین ہے سماہنی سمیت پوری کشمیر ی قوم افواج پاکستان کے شانہ بشانہ کھڑی ہے اور ہندوستان کی ہر طرح کی جاریت کا ڈٹ کر مقابلہ کر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی آنکھیں بند ہے ہمیں تحریک آزادی کشمیر کیلئے اپنی جنگ خود ہی لڑنی ہے دشمن کا مقابلہ کرکے انشا اللہ اپنے وطن کشمیر کو آزاد کروا کے دم لیں گئے۔
انصر محمود چودھری گزشتہ روز بدھ کی شام سماہنی میں سیز فائر لائن سے متصل گائوں گڑھا مہری میں موٹر سائیکل پر دودھ لیکر گھر جا رہا تھا کہ۔ پہاڑ پر مورچہ زن بھارتی فوج نے نوجوان کو گولیوں کا نشانہ بنایا ۔ بھارتی فوج کی ٹارگٹ فائرنگ سے 40سالہ نوجوان انصر محمود چوہدری ولد محمد اشرف سینے میں گولی لگنے سے شہید ہوگیا۔
واپس کریں