اقوام متحدہ، عالمی برادری انسانیت کے خلاف ہندوستان کے مکروہ عزائم کا سخت نوٹس لیں، وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر خان
No image مظفر آباد۔وزیر اعظم آزادجموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدرخان نے کہا ہے کہ ہندوستان مقبوضہ کشمیر اور سیز فائر لائن پر مسلسل معصوم شہریوں کا قتل عام کرنے میں مصروف عمل ہے ۔ انڈین کرونیکلز کے گروہ کے بے نقاب ہونے سے ہندوستان کے پاکستان اور کشمیریوں کے خلاف مکروہ عزائم اور اس کی اصلیت دنیا کے سامنے آگئی ہے ۔ موجودہ صورتحال میں ہم سب کو ہندوستان کے مکروہ پروپیگنڈے کا مقابلہ کرنا ہے ۔وزیر اعظم آزاد کشمیر نے معروف یورپین صحافی فوٹو گرافر سیڈرک گربائے اور چیئرمین کشمیر کونسل یورپ علی رضا سید سے ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہندو ستان کے پاکستان اور کشمیریوں کے خلاف اس منظم نیٹ ورک کے انکشاف بعد اب عالمی اداروں اور اقوام عالم بالخصوص یورپین ممالک کو اس کا سخت نوٹس لینا چاہیے اور اس مکروہ مہم میں ملوث افراد کے خلاف کارروائی کی جانی چاہیے ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ سیڈرک گربائے کا مقبوضہ کشمیر میںبھارت کے انسانیت کے خلاف جنگی جرائم دنیا بھربالخصوص یورپ میں اجاگر کرنے میں بڑا کردار ہے اور اس حوالہ سے ان کی کی کی فوٹوگرافی کی یورپین پارلیمنٹ میں دو نمائشیں ہو چکی ہیں ۔ وزیراعظم راجہ فاروق حیدر خان نے کہاکہ کشمیر کونسل یورپ مظلوم کشمیریوں کی موثرتواناآواز ہے۔ علی رضا سید اور ان کی ٹیم نے انسانی تاریخ کے بدترین مظالم کا شکار معصوم کشمیریوں کی آواز کو دنیا تک پہنچانے میں اپنا بھرپورکردار ادا کیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ انڈین کرونیکلز کے بعد بھارتی مکروہ عزائم کے خلاف خاموش رہنا لاکھوں جانوں کے ساتھ زیادتی ہوگی جو ہندوستانی جبر اور انسانی تاریخ کے بدترین مظالم کا نشانہ بن گئے ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ اقوام متحدہ ، انسانی حقوق کی تنظیمیں اور مہذب ممالک کو انسانیت کے خلاف بھارتی مکروہ عزائم کا سخت نوٹس لیں ۔ بھارت شروع دن سے ہی پاکستان اور کشمیریوں کے خلاف سازشوں میں ملوث ہے اور دنیا بھر میں پاکستان اور کشمیریوں کے خلاف بے بنیادپروپیگنڈا کرتارہا ہے اور اس کیلئے بڑے وسائل کا استعمال کرتا رہا ہے ۔ وزیر اعظم نے کہاکہ ایک طرف دنیا کورونا وباسے نمٹنے میں مصروف عمل ہے جبکہ دوسری جانب بھارت نے اس وباکی آڑ میں کشمیریوں پر مظالم کا سلسلہ تیز کر دیا ہے ۔گزشتہ برس پانچ اگست کے بعد سے مقبوضہ کشمیر ہندوستانی فوجی محاصرے میں ہے۔ معصوم بچوں اور خواتین سمیت کوئی بھی بھارتی جبر سے محفوظ نہیں ،معصوم کشمیریوں پر ایسا بہیمانہ تشدد کیا جاتا ہے کہ اسکے تصور سے ہی رونگٹے کھڑے ہو جاتے ہیں۔ بے گناہ شہریوں کو مار کر ان کی مسخ شدہ لاشیں توہین آمیز انداز میں پھینک دی جاتی ہیں،خواتین کو جنسی تشدد کا نشانہ بنا کر انکی حرمت و تقدس کو پامال کیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہندوستان سیز فائر لائن پر ممنوعہ ہتھیار استعمال کررہا ہے جن کی کوئی بین الاقوامی قانون اجازت نہیں دیتا،سیز فائر لائن پر کھلونا بم اور کلسٹر بم پھینک کر معصوم بچوں کو نشانہ بنایا جاتا ہے،سیز فائر لائن پر ایمبولینسز، سکول بسیں اور مسافر بسیں بھی بھارتی اشتعال انگیزی سے محفوظ نہیں ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ایک طرف ہندوستان انسانی تاریخ کے بدترین مظالم ڈھارہا ہے اور دوسری جانب اقوام عالم کی آنکھوں میں پاکستان اور تحریک آزادی کشمیر کے خلاف پروپیگنڈے کے ذریعے دھول جھونکنے کی کوشش کرتارہا ہے لیکن اب بھارتی پروپیگنڈ بے نقاب ہو چکا ہے۔ وزیر اعظم نے کہاکہ تارکین وطن کشمیری کشمیریوں کے وکیل ہیں ، تحریک آزادی کشمیر کو دنیا بھر میں اجاگر کرنے میں ان کا بڑا کردار ہے ۔ انہوں نے کہا کہ انڈین کرونیکلز کے بعد وقت آگیا ہے کہ بھارت کے مکروہ عزائم کا سخت نوٹس لیا جائے ۔
واپس کریں