مقبوضہ کشمیر کے ضلع بڈگام کی طالبہ کی لگن سے کشمیر کی قدیم دستاویزات کی نمائش
No image سرینگر(کشیر رپورٹ) مقبوضہ کشمیر کے وسطی ضلع( یمراز) بڈگام کی ایک نوجوان لڑکی نے ریاست کشمیر کے قدیم نسخوں کو محفوظ کرنے کا کام شروع کیا ہے ۔پچیس سال زائرہ حسن نے بڈگام ضلع میں بدھ کو قدیم دستاویزات کی نمائش منعقد کی جس میں لوگوں نے گہری دلچسپی لی۔زائرہ حسن نے اس موقع پر کہا کہ ریاست کشمیر کے قدیم ثقافتی ورثہ اور تاریخ کو محفوظ رکھنے میں قدیم دستاویزات نہایت اہم ہیں۔زائرہ حسن نے کہا کہ وہ کشمیر کی تاریخ اور ثقافت سے پیار کرتی ہیں اور ہمیشہ اسے برقرار رکھنا چاہتی ہیں۔زائرہ حسن نے کہا کہ وہ مخطوطات کی تلاش میں گھر گھر جا گئیں۔ انہوں نے کہا ، "میں نے اپنے رشتہ داروں سے کچھ اور اپنے پڑوسیوں سے کچھ حاصل کیا،اس طرح انہوں نے پچیس قدیم نسخے جمع کئے جو اردو ، کشمیر ، فارسی ، عربی اور بلتی سمیت مختلف زبانوں میں لکھے گئے ہیں۔نمائش میں تین سوسالہ قدیم قرآن پاک اور ایک سو تئیس سال پرانے مقالے بھی شامل تھے۔ان میں میر سید علی ہمدانی کے ہاتھ سے تحریر نسخے بھی شامل ہیں جو درختوں کی چھال پہ لکھے گئے ہیں۔
واپس کریں