بلاول اور مریم نواز ہوں تو اسلام ایسے نافذ نہیں کیا جا سکتا، ' پی ڈی ایم' ،' پی ٹی آئی' انگریز سامراج کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں، سراج الحق
No image پشاور۔امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ وزیراعظم(عمران خان) کہتے ہیں تیاری نہیں تھی، تیاری نہیں تھی تو امتحان میں کیوں بیٹھے، اگر تیاری نہیں تھی تو وزارت عظمی کیوں لی، یہ ناکارہ طالبعلم عمران خان اور ان کی کابینہ نقل کے باجود فیل ہے، آج ملک پر خطرات کے بادل ہیں، پاکستان پر اسرائیل کو تسلیم کرنے کے لیے دبا ئوہے، عمران خان نے کہا تھا کہ کشمیر کا سفیر بنوں گا، کشمیر کے سفیر نے کشمیر کو مودی کے حوالے کر دیا۔سراج الحق نے لکی مروت کے سرائے نورنگ قلعہ گرانڈ میں جلسے سے خطاب میں کہا کہ'پی ڈی ایم' اور پی ٹی آئی انگریز سامراج کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں، ایک طرف بلاول اور دوسری طرف مریم نواز ہوں تو اسلام ایسے لاگو نہیں کیا جا سکتا، پی ڈی ایم میں شامل نہ ہونے کی سب سے بڑی وجہ ان کا عوام کو دھوکے میں رکھنا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم اسلامی نظام چاہتے ہیں جہاں قانون سب کے لیے یکساں ہو،ہمیں موقع ملا تو ملک سے سودی نظام کا خاتمہ کریں گے، آئی ایم ایف کا پاکستان پر دبا ئو ہے جس وجہ سے بجلی اور گیس مہنگی کی جا رہی ہے، حکومت کے پائوں عوامی گردن پر ہیں۔امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ یہاں قاتلوں کو سزا نہیں تحفظ ملتا ہے، کراچی میں پولیس نے 400 لوگوں کو مارا، غیرت اور ہمت والے نقیب اللہ کو بھی مارا گیا، آج تک نقیب اللہ کے قاتلوں کو گرفتار نہیں کیا گیا، یہ نظام قاتلوں، ظالموں، شوگر مافیا، لینڈ مافیا اور آٹاچوروں کے لیے ہے، یہاں ان ظالموں کو کوئی سزا نہیں دے سکتا۔
واپس کریں