سرینگر کے قریب طویل جھڑپ میں تین کشمیری فریڈم فائٹرز شہید، ہندوستانی فوجیوں نے تین طالب علموں کو جعلی مقابلے میں شہید کیا ہے،مقامی لوگوں کا بیان
No image سرینگر( کشیر رپورٹ) ہندوستانی حکام کے دعوے کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں ہندوستانی فوج کے ساتھ گزشتہ روز سے جاری جھڑپ میں آج (بدھ کو) تین کشمیری فریڈم فائٹرز شہید ہو گئے۔جبکہ مقامی لوگوں کے مطابق ہندوستانی فوج نے ایک جعلی مقابلے میں تین کشمیری طالب علموں کو شہید کیا ہے۔ہندوستانی حکام نے میڈیا کو بتایا کہ سرینگر کے لاوے پورہ علاقے کو گزشتہ روز ہندوستانی فورسز نے گھیرے میں لے کر تلاشی مہم شروع کی۔ اسی دوران مجاہدین نے فورسز پر فائرنگ شروع کر دی۔رات کے وقت فوجی آپریشن روک دیا گیا اور بدھ کی صبح دوبارہ جھڑپ شروع ہو گئی۔اس جھڑپ کی وجہ سے سرینگر سے بارہمولہ جانے والی شاہراہ بند رہی۔مقامی لوگوں اور میڈیا کے مطابق ہندوستانی فوجیوں نے تین کشمیری طالب علموں کو گرفتار کرنے کے بعد انہیں جعلی مقاملے میں شہید کیا ہے۔ دریں اثناء شوپیاں میں سوموار کو مجاہدیدین کے ساتھ جھڑپ میں مارے جانے والی ہندوستانی فوج کے حوالدار تمار کی لاش بدھ کو ہندوستان اس کے گھر روانہ کی گئی۔
واپس کریں