مودی نے کشمیریوں پر نہیں پاکستان پر وار کیا ہے،گلگت والا ڈرامہ نہیں چلے گا ، وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر،شاہ غلام قادر،طارق فاروق،چودھری عزیز کاخطاب
No image اسلام آباد۔ وزیر اعظم آزادجموں وکشمیر و صدر مسلم لیگ ن راجہ محمد فاروق حیدخان نے کہا ہے کہ جب تک آخری کشمیری زندہ ہے سبز ہلالی پرچم کو کبھی سرنگوں نہیں ہونے دیگا ۔مسلم لیگ ن آزادجموں وکشمیر کا قیام اقتدار کیلئے نہیں بلکہ پاکستان کے ساتھ رشتے کو مزید مضبوط کرنے کیلئے عمل میں لایا گیا۔ میاں نواز شریف کشمیریوں سے جو شفقت کرتے ہیں وہ میں بھی نہیں کرسکتا۔ آزادکشمیر کے عوام کشمیری شہداکے امین ہیں ، کشمیر کی تقسیم کا اختیار صرف کشمیریوں کے پاس ہے ۔ 84ہزار مربع میل ریاست جموں وکشمیر ناقابل تقسیم وحدت ہے ۔ 5اگست2019 کو مودی نے کشمیریوں پر نہیں پاکستان پر وار کیا ہے،کشمیری تو پہلے ہی بھارتی مظالم بھگت رہے ہیں۔ گلگت والا ڈرامہ آزادکشمیر میںنہیں چلے گا ، آزادکشمیر کے عوام اپنے ووٹ کی حفاظت کرینگے ۔ تحریک آزادی کشمیر اور تکمیل پاکستان کیلئے 6لاکھ سے زائد کشمیریوں نے اپنی جانیں قربان کر دیں ، 11ہزار سے زائد کشمیری ماں بہنوں کی آبرو ریزی کی گئی ، سینکڑوں جوانوں کی بینائی پیلٹ گن سے چھین لی گئی۔ آزادکشمیر کے عوام اپنے ووٹ کی حفاظت کرینگے۔ہم نے گزشتہ ساڑھے چار سال ٹھوک بجا کر حکومت کی باقی عرصہ میں بھی ٹھوک بجا کر حکومت کرینگے ۔
ان خیالات کا اظہار صدر مسلم لیگ ن راجہ محمد فاروق حیدرخان نے مسلم لیگ کے یوم تاسیس کے موقع پر جموں وکشمیر ہائوس میں منعقدہ جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جلسہ عام سے مرکزی نائب صدر مسلم لیگ ن محترمہ مریم نواز، مرکزی سیکرٹری جنرل احسن اقبال ، سینئر نائب صدر مسلم لیگ ن آزادجموں وکشمیر چوہدری طارق فاروق ، نائب صدر چوہدری محمد عزیز، سیکرٹری جنرل شاہ غلام قادر نے بھی خطاب کیا جبکہ اس موقع پر چیئرمین مسلم لیگ ن راجہ ظفر الحق ، مسلم لیگ ن کے مرکزی قائدین، وزراحکومت آزادکشمیر ، ن لیگ کے عہدیداران بھی موجود تھے جبکہ ایڈیشنل سیکرٹری جنرل مسلم لیگ ن آزادجموں وکشمیر عبدالخالق وصی نے اس موقع پر قرارداد پیش کی ۔ سٹیج سیکرٹری کے فرائض چیف آرگنائزر مسلم لیگ ن آزادجموں وکشمیر مشتاق منہاس نے سرانجام دیے ۔
صدر مسلم لیگ ن راجہ محمد فاروق حیدرخان نے کہاکہ کشمیر ی عوام نے اپنی خواہشات کو کچل کر پاکستان کی سلامتی اور استحکام کیلئے قربانیاں دیں ۔ بانی پاکستان جب زندگی موت کی کشمکش میں تھے تو ان کی زبان پر تین الفا ظ پاکستان کشمیر اور مہاجرین کے تھے ۔ وزیر اعظم نے کہاکہ نوجوان میرے ماتھے کا جھومر ہیں ، میری امید نوجوانوں سے ہے جو اس قو م کا مستقبل ہیں۔ ایم ایس ایف نے قائد اعظم کے ہر اول دستے کا کردار ادا کیا ۔ قائد اعظم نے ووٹ کی طاقت سے جمہوری طریقے سے دنیا کی سب سے بڑی اسلامی مملکت کا قیام عمل میںلا کر دکھایا۔راجہ محمد فاروق حیدرخان نے کہا کہ جو وعدے 2013میں مسلم لیگ ن کی مرکزی قیادت نے نواز شریف کی موجودگی میں آزادکشمیر کو بااختیار بنانے کے حوالے سے جو وعدے کیے ان پر عمل کیا گیا جس پر میں محمد نواز شریف اور شاہد خاقان عباسی سمیت لیگی قیادت کا شکرگزار ہوں ۔ انہوں نے کہاکہ آج سے115سال قبل مسلم لیگ کا قیام ڈھاکہ میں عمل میں لایا گیا ، فخر ہے کہ مسلم لیگ کی بنیاد رکھنے والے کشمیر النسل تھے اور آج اسی جماعت کا قائد بھی کشمیر ی النسل ہے ۔
انہوں نے کہاکہ پاکستان کے قیام سے قبل مسلم لیگ نے قائد اعظم کی موجودگی میں دو قراردادیں پاس کیں تھیں ایک قرارداد پاکستان اور دوسرے قرارداد فلسطین کے حوالہ سے تھے ، مسلمانان ہند کا طرہ امتیاز تھا کہ انہوں نے اپنے ساتھ ساتھ فلسطین کے مسلمانوں کی بھی فکر کی ۔ انہوں نے کہاکہ فلسطین اور کشمیر عالم اسلام کیلئے لازم وملزوم ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ قائد اعظم نے کشمیر کے دو دورے کیے پہلی بار وہ1936میں کشمیر آئے اور دوسری بار1944کو ۔ قائد اعظم جب1944میں کشمیر آئے تو اس وقت کشمیریوں نے پاکستان کے ساتھ جانے کا عہد کر لیا تھا جس کو آج بھی نبھا رہے ہیں ۔ وزیر اعظم نے کہاکہ قیام پاکستان سے قبل کشمیریوں نے 19جولائی1947کو اپنا مستقبل پاکستان کے ساتھ استورا کر دیا تھا ۔ قائد اعظم نے شیخ عبداللہ کو کہاتھا کہ میںنے اپنے بال دھوپ میں سفید نہیں کیے تم کانگریس پر کبھی اعتبار مت کرنا لیکن شیخ عبداللہ نے اس وقت قائد اعظم کی بات نہ مانی اور جب اگست1953میں شیخ عبداللہ کو ہتھکڑی لگائی گئی تو شیخ عبداللہ کو احساس ہو گیا تھا کہ قائد اعظم درست تھے ۔

یوم تاسیس کے جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے سپیکر اسمبلی سیکرٹری جنرل مسلم لیگ ن آزادکشمیر شاہ غلام قادر نے کہاکہ جب جب مسلم لیگ ن مضبوط ہوئی ملک نے ترقی کی ، محمد نواز شریف نے ایٹمی دھماکے کے ملک کا دفاع ناقابل تسخیر بنای، آج پاکستان میں ہر جگہ نواز شریف کا نام ہے ۔ جب مسلم لیگ کمزور ہوئی پاکستان کو نقصان ہوا۔ انہوں نے کہاکہ مریم نواز نے نواز شریف کی غیر موجودگی میں بھی مسلم لیگ ن کے کارکنوں کو مایوس نہیں ہونے دیا۔ مضبوط مسلم لیگ پاکستان کی سلامتی اور تحریک آزادی کشمیر کی ضامن ہے ،ہم سب ملکر میاں نواز شریف اور مریم نواز کا ہاتھ مضبوط کرینگے۔ اس وقت ملک شدید مشکلات کا شکار ہے ، مہنگائی کی وجہ سے غریب کا جینا دو بھر ہو گیا ہے ۔ تمام مشکلات کا ایک ہی حل ہے کہ میاں نواز شریف اور مسلم لیگ کو مضبوط کیا جائے جو ملکی ترقی کی ضامن ہے ۔

سینئر نائب صدر مسلم لیگ ن آزادجموں وکشمیر وسینئر وزیر چوہدری طارق فاروق نے کہا کہ ہمیں وہ وقت یاد ہے جب مریم نواز شریف نے نواز شریف کی موجودگی میں کا کہا کہ میری رگوں میں کشمیری خون دوڑ رہا ہے ، راجہ محمد فاروق حیدرخان کی قیادت میں مسلم لیگ ن اس وفا کے عہد کو قائم رکھے ہوئے ہے اور ہر حالت میں قائم رکھے گی۔انہوں نے کہا کہ کشمیر بنے گا پاکستان کا نعرہ ہماری منزل ہے ، کسی صورت کسی بھی صوبے کو کشمیری آزادکشمیر کے اندر قبول نہیں کرینگے ۔ انہوں نے کہاکہ ہمارا جینا مرنا قائد اعظم کے پاکستان کے ساتھ ہے ، محترمہ مریم نواز کو یقین دلاتے ہیں کہ ریاست جموں وکشمیر کے عوام اپنے غیر ت مند لیڈر راجہ فاروق حیدرخان کے ساتھ کھڑے ہو کر میاں نوا زشریف کے ساتھ کھڑے رہیں گے اور کشمیر کے اندر مسلم لیگ اور پاکستان کا پرچم سربلند رہے گا۔

یوم تاسیس کے جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے نائب صدر مسلم لیگ ن آزادکشمیر وزیرتعمیرات عامہ چوہدری محمد عزیز نے کہا کہ محترمہ مریم نواز کو یقین دلاتا ہوں کہ کشمیر ی ہمیشہ سے پاکستان کی خالق جماعت کے ساتھ کھڑے رہیں گے ، اس جماعت کے ساتھ کھڑے رہیں گے جس نے پاکستان کو ناقابل تسخیر قوت بنایا۔انہوں نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر کے عوام نے ہندوستان کی فوج کو بے بس کیا ہوا ہے ، ہندوستان کی بزدل فوج انسانی تاریخ کے بدترین مظالم ڈھاکر بھی کشمیریوں کی آواز کو نہیں دبا سکی ۔ انہوںنے کہاکہ کشمیری باوفا لوگ ہیں اور نواز شریف کے ساتھ رہیں گے۔ آنے والے الیکشن میں سیاسیات اور سیاست کی ٹھنڈی اور میٹھی ہوائیں آزادکشمیر سے کراچی کی طرف جائیں گی۔

واپس کریں