ہندوستان کے بعد مقبوضہ جموں وکشمیر میں بھی ' برڈفلو' کی بیماری سے پاکستان اور آزاد کشمیر میں بیماری کے خطرات
No image سرینگر(کشیر رپورٹ) ہندوستان میں پھیلنے والی ' برڈ فلو' کی بیماری مقبوضہ جموں وکشمیر بھی پہنچ گئی ہے۔مقبوضہ جموں وکشمیر کے راجوری علاقے میں بڑی تعداد میں کوے ہلاک ہو ئے ہیں۔ مقامی لوگوں کے مطابق علاقے میں بڑی تعداد میں کوے مردہ حالت میں پائے گئے ہیں۔ ماہرین کے مطابق یہ کوے' برڈفلو' نامی بیماری کا شکار ہو کر ہلاک ہو رہے ہیں۔ہندوستان اور مقبوضہ جموں وکشمیر میں ' برڈ فلو' کی بیماری پھیلنے کی وجہ سے پاکستان اور آزاد کشمیر میں بھی ' برڈ فلو' بیماری پھیلنے کے خطرات پیدا ہو گئے ہیں تاہم پاکستان حکومت کی طرف سے ابھی تک اس سلسلے میں کوئی حفاظتی نہیں کئے گئے ہیں۔
انسانوں کو بھی متاثر کرنے والی پرندوں کی ایک خطرناک بیماری ' برڈ فلو' ہندوستان پہنچ گئی ہے اور ہندوستان کے چھ صوبے برڈ فلو سے متاثر ہوئے ہیں جن میں مدھیہ پردیش،راجھستان،گجرات،کیرالہ،ہریانہ اور ہماچل پردیش شامل ہیں۔ ہندوستان میں 'برڈ فلو' کی بیماری پھیلنے سے پاکستان میں بھی اس بیماری پھیلنے کے خطرات پیدا ہو گئے ہیں۔ہندوستان کے کئی دیگر علاقے بھی ' برڈ فلو' کی بیماری کی زد میں آنے کی اطلاعات ہیں۔ مقبوضہ جموں وکشمیر میںبھی ' برڈفلو' پھیلنے کے خطرات کے پیش نظر ' الرٹ' جاری کیا گیا ہے۔اس صورتحال کے پیش نظر ضروری ہے کہ پاکستان میں ' برڈفلو' سے بچائو کے اقدامات شروع کئے جائیں۔پرندوں کی یہ بیماری مرغیوں کو بھی متاثر کرتی ہے اور مرغیوں کے ذریعے انسان بھی اس سے متاثر ہو جاتے ہیں۔
واپس کریں