وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر کی زیر صدارت کابینہ کی ترقیاتی کمیٹی اجلاس میں 1ارب 72کروڑ کے ترقیاتی منصوبوں کی منظوری
No image اسلام آباد۔ وزیراعظم آزاد حکومت ریاست جموں و کشمیر راجہ فاروق حیدر خان کی زیر صدارت کابینہ کی ترقیاتی کمیٹی کے اجلاس میں میں 1ارب 72کروڑ 25لاکھ،3ہزار روپے سے زائدمالیت کے منصوبہ جات کی منظوری دی گئی۔ایمپروومنٹ اینڈ ریکنڈیشنگ آف کوٹلی گلپور کیروٹ روڈ کے لیے 57کروڑ،94لاکھ 57ہزارمنظوری دی گئی جس پر حکومت آادکشمیر کے بجٹ سے اخراجا ت ہوں گے۔ لائن آف کنٹرول پر واقع13 انتخابی حلقہ میں ایل او سی پیکج فیز 1کے تحت 138کلومیٹر سڑکوں کی تعمیرکے لیے 1ارب، 14کروڑ، 30لاکھ، 46000ہزار روپے کی مالیت کے منصوبہ جات منظور کیے گئے۔ اس کے علاوہ فیز 1کے تحت لائن آف کنٹرول پرپاک فوج کے تعاون سے 800بنکرز بھی تعمیر کیے جائیں گے۔
اجلاس میں وزرا کرا م راجہ محمد نثار خان، ڈاکٹر نجیب نقی خان، سردار فاروق احمد طاہر،چوہدری محمد عزیز، سردار فاروق سکندر، بیرسٹر افتخار گیلانی،ڈاکٹر مصطفی بشیر،چوہدری یاسین گلشن،سید شوکت علی شاہ، ناصر حسین ڈار،چوہدری محمد اسحاق،، چیف سیکرٹری ڈاکٹر شہزاد خان بنگش،ا یڈیشنل چیف سیکرٹری ترقیات ڈاکٹر سید آصف حسین، سیکرٹری صاحبان حکومت اور دیگر اعلی آفیسران نے شرکت کی۔
اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے وزیر اعظم آزادجموں وکشمیر راجہ محمدفاروق حیدرخان نے کہا کہ لائن آف کنٹرول ایل او سی پیکج پاک فوج اور حکومت آزادکشمیر نے مل کر تیار کیا ہے اس کی منظوری اور فنڈز کی فراہمی کے لیے حکومت پاکستان اور پاک فوج کے شکر گزار ہیں۔ تمام پراجیکٹس دفاعی نقطہ نظر رکھ کر ترتیب دیے گئے ہیں۔و زیر اعظم نے کہا کہ لائن آف کنٹرول لائن پر بسنے والے 6لاکھ 10ہزار لوگوں کے لیے یہ پراجیکٹس بہت اہمیت کے حامل ہیں جو لائن آف کنٹرول کی پانچ کلومیٹر پٹی کے اندر رہتے ہیں۔ حکومت آزادکشمیر اس کے ساتھ ساتھ اپنے بجٹ سے بھی ان علاقوں میں اربوں روپے کے منصوبہ جات شروع کر رکھے ہیں۔ اس کا دوسرا فیز بھی جلد شروع ہوگا۔ یہ خالصتا لائن آف کنٹرول پر دفاعی نقطہ نظر کو مد نظر رکھتے ہوئے ترتیب دیئے گئے ہیں۔کابینہ کی ترقیاتی کمیٹی نے ان منصوبہ جات کی منظوری دی۔

واپس کریں