لداخ کے چشول علاقے میں چین کے ایک فوجی کی گرفتاری کا ہندوستانی دعوی
No image نئی دہلی۔ ہندوستان نے دعوی کیا ہے کہ لداخ کے جنوبی علاقے چشول میں چین کے ایک فوجی کو گرفتار کیا گیا ہے۔ہندوستانی فوج کے ایک اعلی عہدیدار نے میڈیا کوبتایا کہ چین کے اس فوجی کو جمعہ کے روز گرفتار کیا گیا اور اس سے تفتیش جاری ہے ۔ہندوستانی فوجی عہدیدار نے یہ بھی کہا کہ چینی فوج کے ساتھ معمول کے اجلاس کے بعد چینی فوجی کو رہا کیا جائے گا۔ہندوستانی فوج فی الحال ترجمان اور دیگر ماہرین کی مدد سے پی ایل اے کے سپاہی سے پوچھ گچھ کررہی ہے کہ آیا وہ جاسوسی کے مشن پر تھا یا نادانستہ طور پر رات کو ایل اے سی کے پار بھٹک گیا تھا۔واضح رہے کہ ہندوستانی فوج لداخ میں جدید طیارے،توپ خانے،ٹینکوں،جدید میزائل سمیت ہر طرح کے جنگی ساز و سامان کے باوجود چین کی فوج سے نہایت خوفزدہ ہے۔چین نے لداخ میں ایک وسیع علاقے پر قبضہ کیا ہے اور متعدد ہندوستانی فوجی چینی فوجیوں کے ساتھ بغیر ہتھیاروں کی لڑائی میں ہلاک ہو چکے ہیں۔
واپس کریں