ہندوستان کو معصوم کشمیریوں پر مظالم کا حساب دینا ہوگا،وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان
No image اسلام آباد۔ وزیر اعظم آزادجموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدرخان نے سیز فائر لائن پر ہندوستانی فوج کی جانب سے معصوم شہریوں پر بلااشتعال فائرنگ کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہندوستان انسانیت کی تمام حدیں پار چکا ہے ،ہندوستان کو معصوم کشمیریوں پر مظالم کا حساب دینا ہوگا، اقوام متحدہ ، انسانی حقوق کی ادارے اور عالمی برادری ہندوستان کے خلاف عملی اقدامات اٹھائیں ، ہندوستان انسانیت کا دشمن ہے ، مودی انتہاپسندوں کا نمائندہ ہے جس نے اپنی فوج کو کشمیریوں کی نسل کشی کی کھلی چھٹی دے رکھی ہے ۔ اپنے ایک بیان میں وزیر اعظم نے کہاکہ ہندوستان مسلسل سیز فائرلائن کی خلاف ورزیاں کرتے ہوئے آزادکشمیر کے معصوم شہریوں کو گولیوں کا نشانہ بنارہا ہے جبکہ مقبوضہ کشمیر میں بھی تاریخ کے بدترین مظالم ڈھا کر کشمیریوں کے قتل عام میں مصروف عمل ہے لیکن اقوام متحدہ خاموش تماشائی بنی ہے ، اقوام متحدہ سیکورٹی کونسل کی قراردادوں پر عملدرآمد کروائے ۔ کشمیریوں نے بہت مظالم سہہ لیے ، گزشتہ سات دھائیوں سے کشمیریوں نے آزادی کیلئے قربانیوں کی لازوال داستان رقم کی ہے۔ انہوں نے کہاکہ اب تک 31سے زائد آزادکشمیر کے معصوم شہری ہندوستانی فوج کی اشتعال انگیزی کا نشانہ بن چکے ہیں ، سینکڑوں زخمی جبکہ ہزاروں شہریوں کی املاک کو ہندوستان فوج کی بلااشتعال فائرنگ سے تباہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ جب مسئلہ کشمیر حل نہیں ہوتا خطہ میں امن قائم نہیں ہو سکتا ۔ انہوں نے کہاکہ سیز فائر لائن پر بسنے والے آزادکشمیر کے شہریوں کے حوصلے بلند ہیں ،وہ ہندوستان کی جارحیت سے ڈرنے والے نہیں اور افواج پاکستان کے شانہ بشانہ دفاع وطن کیلئے قربانیوں کی لازوال داستان رقم کررہے ہیں۔ دریں اثناوزیراعظم آزادجموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدرخان نے انتظامیہ کو کسی بھی ناخوشگوار صورتحال سے نمٹنے کیلئے تیار رہنے کی ہدایت کی ہے ۔
واپس کریں