سجاد لون نے ' گپکار اتحاد ' سے طلاق لے لی، '' ہم مودی حکومت نہیں بلکہ ایک دوسرے کے خلاف جنگ لڑتے آئے ہیں'' ،سجاد لون
No image سرینگر( کشیر رپورٹ) ہندوستانی مقبوضہ جموں وکشمیر میں سات ہندوستان نواز سیاسی جماعتوں کے اتحاد '' گپکار ڈیکلریشن'' میں حالیہ بلدیاتی الیکشن میں '' بندر بانٹ'' پر اختلاف کی صورتحال میں پیپلز کانفرنس کے سجاد لون نے '' گپکار اتحاد'' سے علیحدگی کا اعلان کیا ہے ۔
تفصیلات کے مطابق پیپلز کانفرنس کے چیئرمین سجاد لون نے منگل کو ' گپکار ڈیکلریشن' سے علیحدگی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ حالیہ ڈسٹرکٹ ڈویلپمنٹ کونسل کے الیکشن میں باہمی اعتماد کو نقصان پہنچایا گیا ہے۔سجاد لون نے کہا کہ اتحاد میں شامل رہنمائوں کا طرز عمل علاج سے بالاتر ہے، اس گندگی میں شامل رہنے کے بجائے اس اتحاد سے دستبرداری کرنی چاہئے۔سجاد لون نے ' گپکار اتحاد ' کے سربراہ فاروق عبداللہ کے نام ایک خط میں کہا کہ علیحدگی کے باوجود '' گپکار ڈیکلریشن'' کے مقصد پر ساتھ رہیں گے اور مخالفانہ بیان بازی نہیں کریں گے۔سجاد لون نے کہا کہ حالیہ ' ڈی ڈی سی'' الیکشن میں پیپلز کانفرنس کو اس کا مناسب حصہ نہیں دیا گیا۔سجاد لون نے کہا کہ ہم '' گپکار اتحاد'' سے ' طلاق' لے رہے ہیںاور اب اس کا حصہ نہیں بنیں گے۔سجاد لون نے کہا کہ '' گپکار ڈیکلریشن'' کے اتحاد نے 5 اگست2019 کا اقدام کرنے والے مجرموں کے خلاف نہیں بلکہ صوبہ کشمیر میں ایک دوسرے کے خلاف جنگ لڑی ہے۔
واضح رہے کہ ان سات ہندوستان نواز رہنمائوں کے اس اتحاد سے پاکستان کی عمران خان حکومت نے بھی توقعات وابستہ کر رکھی ہیں۔وزیر اعظم عمران خان اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اپنے بیانات سے ہندوستان کے حامی ان سیاستدانوں سے کئی توقعات وابستہ کی تھیں۔
واپس کریں