نیب نے 20سال میں 45ملین ڈالر برآمد کئے،پاکستان کو اب برطانوی تحقیقاتی فرم کو تقریبا40ملین ڈالر ادارکرنا پڑے،وکلاء فیس ابھی بقایہ
No image
اسلام آباد ( کشیر رپورٹ) قومی احتساب بیورو( نیب) نے گزشتہ بیس سال میں کل 45ملین ڈالر برآمد کئے ہیں جبکہ اب پاکستان کو ایک برطانوی فرم (براڈ شیٹ)کو نیب کی تحقیقات کے حوالے سے تقریبا چالیس یہ ملین ڈالر ادا کرنے پڑے ہیں جبکہ وکلاء کی فیس ابھی بقایہ ہے۔ ' ڈان ' ٹی وی کے پروگرام'' ذرا ہٹ کے'' میں معروف صحافیوں، ضرار کھوڑو،منشر زیدی اور وسعت اللہ خان نے کہا کہ جب سے نیب بنی ہے تو اب تک،بیس سال میں تقریبا45ملین ڈالر برآمد ہوئے ہیں،جبکہ پاکستان کونیب کے حوالے سے برطانیہ کی ایک فرم کو تقریبا چالیس ملین ڈالر ادا کرنے پڑے ہیں جبکہ وکلاء کی فیس اس سے الگ ہے۔
یوں دوسروں کا نام نہاد احتساب کرتے کرتے '' براڈ شیٹ'' سکینڈل میں نیب خود قومی،عوامی کٹہرے میں آ گئی ہے۔یہ پاکستان میں احتساب کی اصل حقیقت ہے اور اس سے یہ حقیقت بھی واضح ہوتی ہے کہ ملک میں احتساب محض سیاسی انتقامی کاروائیوں کے لئے استعمال ہوتا چلا آ رہا ہے اور احتساب کے ذریعے سیاستدانوں کو اپنی مرضی کے مطابق چلانے اور کردار کشی کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔
واپس کریں