کورونا وبا کی تیسری لہر تشویشناک،وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر کی سربراہی میں اجلاس
No image مظفر آباد۔وزیر اعظم آزادجموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدرخان کی زیر صدارت کورونا وائرس کی تازہ ترین صورتحال کا جائزہ لینے کے حوالہ سے اعلی سطحی اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں وزیر صحت ڈاکٹر نجیب نقی ، وزیر تعلیم بیرسٹرا فتخارگیلانی ، چیئرمین مرکزی زکو کونسل صاحبزادہ سلیم چشتی ، پرنسپل سیکرٹری ، سیکرٹری صحت، سیکرٹری سکولز، سیکرٹری کالجز ، ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ ، کمشنر مظفرآباد، ڈپٹی کمشنر و دیگر نے شرکت کی ۔ اجلاس میں آزادکشمیر میں کورونا وائرس کی بڑھتی ہوئی صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ کوروناوائرس سے بچا ئوکیلئے جاری کیے گئے ایس او پیز پر سختی سے عملدرآمد کروایا جائے گا ، ٹرانسپورٹ،بازاروں اور تعلیمی اداروں میں جائزہ لیکر اقدامات اٹھائے جائیں گے ، علماکرام سے بھی مساجد میں ایس او پیز پر عملدرآمد کیلئے گزارش کی جائے گی، شادی بیاہ ، سیاسی و سماجی ودیگر تقریبات میں ایس او پیز پر بہر صورت عملدرآمد کروایاجائے گا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدرخان نے کہاکہ کورونا وباکی تیسری لہر میں تیزی سے اضافہ انتہائی تشویشناک ہے ، عوام الناس کی جانب سے بے احتیاطی اس موذی مرض کے پھیلا کا باعث بن رہی ہے ۔ وزیر اعظم نے کہاکہ عوام ذمہ داری کا مظاہرہ کریں ، ایس او پیز پر عملدرآمد کریں تاکہ اس مہلک وباکا پھیلا کنٹرول میں رہے ،بصورت دیگر سخت اقدامات اٹھائے جائیں گے ۔ انہوں نے کہاکہ عوام کی جان و مال کا تحفظ ہماری بنیادی ذمہ داری ہے ہم چاہتے ہیں کہ عوا م الناس ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایس او پیز پر عملدرآمد کرتے ہوئے معمولات زندگی سرانجام دیں تاکہ حکومت کو سخت فیصلے نہ کرنا پڑیں۔ انہوں نے کہاکہ کورونا ویکسین ہر شخص تک پہنچنے میں بھی وقت لگے گا اس لیے احتیاط ہی بچا کا واحد راستہ ہے ۔ اجلاس میں وزیر اعظم آزادکشمیر نے وزیر تعلیم کو ہدایت کی کہ جن اداروں میں کیسز کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے ان اداروں میں مڈل تک کلاسز کی بندش کے حوالہ سے صورتحال کو مدنظررکھتے ہوئے تجاویز مرتب کر کے آئندہ اجلاس میں پیش کریں ۔ وزیراعظم نے کہاکہ اس سال چونکہ ثانوی اور انٹرمیڈیٹ کے امتحان بھی ہونے ہیں اس لیے ایسا طریقہ کار اپنایا جائے کہ تعلیمی عمل بھی جاری رہے اور یہ مہلک وبابھی نہ پھیلے ۔ اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے سیکرٹری صحت نے بتایا کہ آزادکشمیر میں تعلیمی اداروں میں کورونا وائرس کے پھیلا کی شرح چار سے پانچ فیصد ہے جبکہ آزادکشمیر بھر میں مثبت کیسزآنے کی شرح میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے اور میرپور ڈویژن اس کا مرکز ہے جبکہ پونچھ ڈویژن میں بھی کورونا وائرس کے کیسز بڑھ رہے ہیں اور گزشتہ چند روز سے مظفرآباد ڈویژن سے بھی مسلسل مثبت کیسز آرہے ہیں،اگر اس صورتحال کا روکا نہ گیا تو پھر خطرناک صورتحال کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے ۔
وزیر اعظم آزادجموں وکشمیر راجہ محمدفاروق حیدرخان سے ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے کنٹری ڈائریکٹر Dr Palitha Gunarathna Mahipala نے وفد کے ہمراہ ملاقات کی اورWHOکی جانب سے آزادکشمیر کیلئے ایمبولینسز وزیراعظم آزادکشمیر کے حوالے کیں ۔ اس موقع پر وزیر صحت ڈاکٹر نجیب نقی ، سیکرٹری صحت میجر جنرل احسن الطاف، پروگرام منیجر ای پی آئی ڈاکٹر بشری شمس و دیگر بھی موجود تھے ۔ وزیراعظم آزادکشمیر نے WHOکے کنٹری ڈائریکٹراور وفد کے اعزاز میں ظہرانہ دیا ۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم آزادکشمیر نے کہاکہ کورونا ویکسین کے خلاف پروپیگنڈا دم توڑ رہا ہے ، حالیہ لہر تیزی سے پھیل رہی ہے ، اس سلسلہ میں تمام سٹیک ہولڈرز کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا ۔ انہوں نے کہاکہ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی جانب سے خصوصی تعاون اور ایمبولینسز و دیگر سامان کی فراہمی پر شکریہ ادا کرتے ہیں ۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے کنٹری ڈائریکٹر Dr Palitha Gunarathna Mahipala نے کہاکہ آزاد کشمیر میں فرنٹ لائن ورکرز کی کورونا ویکسی نیشن کی شرح87فیصد ہے ، حکومت آزادکشمیر کورونا وباکے دوران بہترین کام کیا اور بروقت اقدامات اٹھائے جس کی وجہ سے وباکا پھیلا کنٹرول میں رہا ۔
وزیر اعظم آزادجموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدرخان سے ممتاز سماجی کارکن عبدالستار ایدھی کے صاحبزادے فیصل ایدھی نے ملاقات کی ۔ اس موقع پر فیصل ایدھی نے آزادکشمیر میں دارلحکومت مظفرآباد میں جدید سہولیات کے مزین ایدھی آفس بنانے اور ایدھی یونیورسٹی کا قیام عمل میں لانے پر دلچسپی کا اظہار کیا۔ اس موقع پر وزیرا عظم آزادکشمیر نے کہاکہ حکومت آزادکشمیر اس سلسلہ میں ایدھی فانڈیشن کے ساتھ بھرپور تعاون کرے گی۔ سابق چیئرمین پاکستان ریڈ کریسنٹ سوسائٹی ڈاکٹر سعید الہی ، راجہ شعیب ودیگر بھی اس موقع پر موجود تھے ۔

واپس کریں