آزاد کشمیر الیکشن کمیشن نے گوشوارے جمع نہ کرانے پر چار ارکان اسمبلی کی رکنیت معطل اور پانچ جماعتوں کی رجسٹریشن منسوخ کر دی
No image مظفرآباد۔ چیف الیکشن کمشنر آزاد جموں وکشمیر جسٹس (ر) عبدالرشید سلہریا کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں آزاد جموں وکشمیر الیکشن کمیشن نے ممبران اسمبلی چوہدری علی شان سونی، سردار محمد صغیر خان، ملک محمد نواز اور محمد اسحاق کی زیر دفعہ) 78)ذیلی دفعہ 6آزادجموں وکشمیر الیکشن ایکٹ 2020 کے تحت اسمبلی رکنیت معطل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ منگل کے روز ہونے والے اجلاس میں ممبران آزاد جموں و کشمیر الیکشن کمیشن اجلاس میں ممبران راجہ محمد فاروق نیاز، فرحت علی میر، سیکرٹری آزادجموں وکشمیر الیکشن کمیشن محمد غضنفر خان اور الیکشن کمیشن کے آفیسران شریک تھے۔ آزاد جموں وکشمیر قانون ساز اسمبلی کے ممبران قانون کے تحت ہر سال اپنی جائیدادوں کے گوشوارہ جات 30دسمبر تک جمع کروانے کے پابند ہیں۔ اس حوالہ سے جملہ فاضل اراکین اسمبلی کو آگاہ کیا گیا تھا تاہم دی گئی مہلت /معیاد کے باوجود جن اراکین اسمبلی کی جانب سے جائیدادوں کے گوشواراجات جمع نہیں کروائے گئے ان کی رکنیت معطل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اجلاس میں جملہ فاضل ممبران کی جانب سے جمع شدہ گوشوارہ جات کی چھان بین کے لئے سیکرٹری آزاد جموں وکشمیر الیکشن کمیشن کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے جو جمع شدہ گوشواراجات کی چھان بین مکمل کرتے ہوئے الیکشن کمیشن کو قانونی کارروائی کے لیے رپورٹ پیش کرے گی۔

آزادجموں وکشمیر الیکشن کمیشن کے منگل کے روز ہونے والے اجلاس میں آزادکشمیر کی سیاسی جماعتوں جموں وکشمیر نظام مصطفی کانفرنس، آل کشمیر پارٹیAJK، جموں وکشمیر قومی موومنٹ، پاکستان مسلم لیگ فنکشنل AJK، نیشنل لیبر کونسل AJKکی ریکوائرمنٹ پوری نہ کرنے پر دی گئی عبوری رجسٹریشن منسوخ کر دی گئی ہے۔ ان جماعتوں کو عبوری طور پر رجسٹرڈ کرتے ہوئے اندر 60ایام اپنے اکانٹس فراہم کرنے اور مطابق قانون دیگر کوائف الیکشن ایکٹ 2020کی دفعہ 128 کے تحت سیاسی جماعتوں کے لیے ضروری ہے کہ وہ اپنی طرف سے 1000ممبران پر مشتمل لسٹ جس پر ممبران کے دستخط یا نشان یا انگوٹھہ موجود ہو،الیکشن کمیشن کو فراہم کرے اور مبلغ 2لاکھ روپے رجسٹریشن فیس داخل کرنے سمیت اپنی جماعت کے اکانٹس بھی الیکشن کمیشن کو فراہم کریں۔ چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) عبدالرشید سلہریا کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں الیکشن کمیشن کی جانب سے 25مارچ 2021تک مطلوبہ کاغذات پورا کرنے والی سیاسی جماعتوں کی رجسٹریشن کو کنفرم کر دیا گیا بقیہ جن سیاسی جماعتوں نے مطلوبہ کاغذات جمع کروانے کے لیے مہلت لی تھی ان کو 15اپریل تک کا وقت دیا گیا ہے، مطلوبہ کوائف پورا کرنے والی سیاسی جماعتوں کی رجسٹریشن کنفرم کردی گئی ہے جبکہ دیگر سیاسی جماعتیں جنہوں نے مطلوبہ کوائف 25مارچ2021تککمیشن کے پاس جمع نہیں کروائے ان کی عبوری رجسٹریشن منسوخ کر دی گئی ہے

آزادجموں وکشمیر الیکشن کمیشن نے ووٹر فہرستوں پر اعتراضات داخل کروانے کی تاریخ میں 7اپریل 2021تک توسیع کر دی ہے۔ آزادجموں وکشمیر الیکشن کمیشن کا منگل کے روز چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) عبدالرشیدسلہریا کی صدارت میں اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں ممبران آزادجموں وکشمیر الیکشن کمیشن راجہ محمد فاروق نیاز، فرحت علی میر، سیکرٹری آزادجموں وکشمیر الیکشن کمیشن محمد غضنفر خان اور الیکشن کمیشن کے آفیسران نے شرکت کی۔ اجلاس میں آمدہ انتخابات 2021کی ووٹر فہرستوں کی تیاری اور اس پر ہونے والی پراگریس کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں نادرا کی جانب سے ووٹر فہرستہا کے مسودات موصول ہونے کے بعد تمام رجسٹریشن آفیسران کے دفاتر میں آویزاں کر دیئے گئے ہیں۔ عوام الناس جن پر 19تا 31مارچ تک اپنے اعتراضات داخل کروا سکتے تھے۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ موصولہ شکایات کے پیش نظر 7اپریل 2021تک اعتراضات داخل کرانے کے لیے تاریخ میں توسیع کی گئی ہے اس سلسلہ میں جملہ متعلقین ووٹر فہرستہا پرکسی بھی قسم کا اعتراض ہونے کی صورت میں اپنے اعتراض تاریخ مقررہ تک رجسٹریشن افسر کے پاس داخل کرا سکتے ہیں جن پر فیصلہ کے بعد فہرست ہا کو حتمی شکل دی جائے گی۔ اس سلسلہ میں الیکشن کمیشن نے جملہ ڈپٹی کمشنر صاحبان اور رجسٹریشن افسران کو بھی ہدایت جاری کی ہے کہ کسی بھی شکایت کا جائزہ لینے پر بر موقع اس کو یکسو کیا جائے تاکہ شفاف ووٹر فہرستہا کی تیاری یقینی ہو سکے۔
واپس کریں